میرٹ اور شفافیت کو اولین ترجیح حاصل ہے، شہرام خان ترکئی

میرٹ اور شفافیت کو اولین ترجیح حاصل ہے، شہرام خان ترکئی

پشاور(سٹاف رپورٹر) خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر برائے بلدیات شہرام تراکئی نے شفافیت اور میرٹ کی بالادستی کو اپنی اولین ترجیح قرار دیتے ہوئے واٹر اینڈ سینٹیشن سروس پشاور (ڈبلیو ایس ایس پی) کے حکام کو ہدایت کی ہے کہ ادارے میں سکیل۔5 اور اوپر کی تمام تر آسامیاں این ٹی ایس، ایٹا یا دیگر قابل اعتماد ٹسٹنگ سروس کے تحت مسابقاتی عمل کے ذریعے پرکئے جائیں۔ جبکہ درجہ چہارم کی آسامیوں پر بھرتیوں کے لئے ایک ایسی یکساں پالیسی وضع کی جائے جس میں کسی بھی قسم کی سفارش کی گنجائش نہ ہو۔ بھرتیوں کے سارے عمل میں سو فیصد شفافیت اور میرٹ کی بالادستی کو یقینی بنایا جائے۔ انہو ں نے حکام کو یہ بھی ہدایت کی ہے کہ ادار میں دستیاب انسانی وسائل کے بہتر اور موثر استعمال کو یقینی بنایا جائے۔ فیلڈ اسٹاف کی موثر مانیٹرنگ کے لئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کو استعمال میں لاجائے اور گھوسٹ ملازمین کے خاتمے کے لئے موثر اقدامات اٹھائے جائیں۔ یہ ہدایات انہو ں نے پیر کے روز پشاور میں ڈبلیو ایس ایس پی کے حکام کی طرف سے دی جانے والی ابتدائی بریفینگ کے دوران جاری کیں۔ پینے کے پانی کے بے دریغ استعمال کو آئندہ کے نسلوں کے ساتھ ظلم قرار دیتے ہوئے صوبائی وزیرنے ادارے کے حکام کو ہدایت کی کہ ا سکی روک تھام کے لئے قابل عمل تجاویز پیش کئے جائیں تاکہ حکومت اس حوالے سے موثر فیصلے کرسکے۔ شہرام تراکئی نے ڈبلیو ایس ایس پی کے گذشتہ چار سالوں کی کاکردگی کو جانچنے کے لئے نئے سرے سے تجزیاتی رپورٹ پیش کرنے اور اگلے سو دنوں کے لئے ایک پلان تشکیل دینے کی بھی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ ادارہ خدمات کی فراہمی کے روایتی طریقوں سے ہٹ کر جدید انداز میں کام کرے۔ صوبائی وریر نے حکام پر زور دیا کہ وہ شہریوں کو شہری زندگی کے اصولوں سے متعلق اگہی دینے کے لئے ایک بڑے پیمانے پر آگہی مہم چلائے جس میں ابلاغ عامہ کے تمام ذرائع کوموثر انداز میں استعمال کیا جائے۔ گذشتہ عید الاضحی کے موقع پر پشاور میں جانوروں کے الائشوں کو بروقت ٹھکانہ لگانے اور صفائی کی صورت حال کے حوالے سے ڈبلیو ایس ایس پی کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ادارہ عام دنوں میں بھی صفائی کے صورتحال کو بہتر بنانے اور کوڑا کرکٹ کو بروقت ٹھانے لگانے کے لئے اپنے تمام تر وسائل کا بہتر اور موثر استعمال یقینی بنائے تاکہ اس ادارے کے قیام کے مقاصد پورے ہوسکیں۔ صوبائی وزیر نے ڈبلیو اس ایس پی کے زیر اتنظام چلنے والے ٹیوب ویلوں کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کے لئے ایک فیزبیلٹی رپورٹ تیار کرنے کی بھی ہدایت کی ادارے کے چیف ایگزیکٹو آفیسر خانزیب خان نے صوبائی وزیر کو ادارے کی اب تک کی کارکردگی ،مالی وسائل ، انتظامی امور اور دیگر مختلف ، پہلوؤں پر تفصیلی بریفنگ دی۔ سیکرٹری بلدیات سید جمال شاہ کے علاوہ ڈبلیو ایس ای پی بورڈ آف ڈائریکٹر زکے چیئرمین طاہر عظیم، بورڈ ممبران اور دیگر انتظامی افسرا ن بھی اس موقع پر موجود تھے۔

مزید : کراچی صفحہ اول