49 علماء کا ضلع راجن پور میں داخلہ بند ‘ شر انگیز تقاریر پر بھی پابندی

49 علماء کا ضلع راجن پور میں داخلہ بند ‘ شر انگیز تقاریر پر بھی پابندی

راجن پور (ڈسٹر کٹ رپورٹر) ڈپٹی کمشنر راجن پور نے ایک مراسلہ کے ذریعے ضلع راجن پور میں 49 مختلف مکاتب فکر کے علماء کرام کا محرم الحرام کے موقع پر ضلع راجن پور میں داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے ۔انہوں نے اونچی آواز میں لاؤڈ اسپیکر چلانے ،شر انگیز تقاریر اور مواد پر بھی پابندی (بقیہ نمبر58صفحہ7پر )

عائد کر دی ہے ۔جن علماء کرام پر پابندی لگائی گئی ہے ان کے نام یہ ہیں ۔علامہ ساجد نقوی،علامہ غلام حسین،بشیر حسین،سید مداح حسین ،عقیل عباس نقوی،مولانا فاضل حسین موسوی، مولانا محمد عباس،علامہ طالب حسین جوہری،سید سبطین شاہ کاظمی، مولانا غلام شبیر،نذاکت عباس عرف مزائل ،مولانا طاہر مہدی ،کفایت حسین نقوی،مولانا سید تقی نقوی، مولانا ضیاء الحسین،محمد حسین ڈھگو ،غضنفر عباس تونسوی ،غلام عباس فریدی،حسین معاویہ،مولانا عبدالغفور حقانی، مولوی محمد عمر قریشی ،مولانا محمد یحییٰ عباسی،مولانا سلطان محمود ضیاء،مولوی محمد رفیق،مولانا اللہ وسایا صدیقی ،مولانا عبدالرزاق حیدری،مولانا اورنگزیب فاروقی ،ڈاکٹر خادم حسین گھلو،قاری سعید الرحمان ،ناصر جاوید ،مولانا فاروق احمد ،مولانا عبدالعزیز سدھوانی ،اُمِ حسن ،ریحان ضیاء فاروقی ،سہیل عباس نقوی،ظفر شہزاد ،ثناء اللہ حیدری،مولانا عالم طارق ،مولانا کفایت حسین نقوی، مسرور نواز جھنگوی،معاویہ اعظم،شبیر احمد عثمانی ،ریاض احمد جھنگوی،مولانا اللہ وسایا ،مولانا محمد احمد لدھیانوی ،عبدالغفار تونسوی ،مولانا عبدالخالق رحمانی،مولانا مسعود الرحمان عثمانی اور حافظ سعید احمد شامل ہیں۔

پابندی

مزید : ملتان صفحہ آخر