کشمیر حکومت عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام ہوگئی،لطیف اکبر

کشمیر حکومت عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام ہوگئی،لطیف اکبر

مظفرآباد(خبرنگار خصوصی)پی پی پی آزاد کشمیر کے سربراہ سابق وزیر خزانہ چوہدری لطیف اکبر نے کہا ہے کہ آزاد حکومت عوام کو ریلیف دینے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے۔حکومتی بے حسی کے باعث دریائے نیلم،نالہ لئی کی شکل اختیار کر دیا،دریائے جہلم کو بچانے کیلئے عوام کو آگے آنا ہو گا۔کومی کوٹ روڈ کھنڈرات بنگئی ہے،حلقہ ایل اے 18کے ضمنی انتخابات میں پیپلزپارٹی بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کرے گی۔ملک حنیف جیسے کارکنان پارٹی کا قیمتی سرمایہ ہیں۔عوامی حقوق کیلئے جدوجہد جاری رکھیں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیپلزپارٹی کھاوڑہ کے رہنما ملک محمد حنیف اعوان کے فرزند ملک ریحان حنیف اعوان کی شادی کے موقع پر سینئر صحافی شبیر اعوان،عمر اعوان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ملک ہاؤس گہل حلقہ 4پہنچنے پر چوہدری لطیف اکبر کا شاندار اور تاریخی استقبال کیا گیا۔چوہدری لطیف اکبر نے کہا کہ موجودہ حکومت اڑھائی سالوں کے دوران عوام کو ریلیف دینے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے۔حکومت نے پیپلزپارٹی کے دور میں دیئے گئے تعلیمی پیکج کلے خاتمے کے علاوہ کوئی خاطر خواہ کام نہیں کیا۔پیپلزپارٹی کی قیادت عدالتی جنگ لڑ کر دوبارہ پیکج کو بحال کرواتے ہوئے بچوں سے چھینی گئی کتابیں اور قلم دوات واپس کروائی،اس طرح موجودہ حکومت کے گڈگورننس،میرٹ قانون وآئین کی بالادستی کے دعوے بھی ہوائی ثابت ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اڑھائی سالوں میں واپڈا سے معاہدہ نہ کر کے نیلم جہلم پراجیکٹ سے دریائے نیلم کا پانی خشک کروا کر حکومت نے بے حسی اور مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کیا ہے۔اس تناظر کوہالہ پراجیکٹ کی تعمیر سے قبل تحفظات دور کرنے ہونگے،حکومت نے کشمیر کونسل ختم کر کے وفاقت کے ساتھ ایک جنگ چھیڑ دی ہے،کونسل کے خاتمے سے آزاد خطے کی تعمیروترقی اور پاکستان سے رابطہ کاری بری طرح متاثر ہوئی ہے،انہوں نے مزید کہا کہ گڑھی دوپٹہ کومی کوٹ روڈ جو کہ دفاعی،عوامی اہمیت کی حامل ہے،ٹریفک کے چلنے کے قابل نہیں ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر