بیگم کلثوم نواز رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے کے باوجود حلف نہ اٹھا سکیں

بیگم کلثوم نواز رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے کے باوجود حلف نہ اٹھا سکیں
بیگم کلثوم نواز رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے کے باوجود حلف نہ اٹھا سکیں

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ نے نواز شریف کی نااہلی کے بعد بیگم کلثوم نواز کو ان کی خالی نشست این اے 120 سے ضمنی انتخاب لڑانے کا فیصلہ کیا لیکن انتخابات سے قبل ہی 2017ءمیں انہیں کیسنر کے مرض کی تشخیص کے باعث لندن منتقل کر دیا گیا اور وہ ان کی انتخابی مہم ان کی بیٹی مریم نواز نے چلائی اور وہ کامیاب بھی ہوئیں لیکن لندن میں زیر علاج ہونے کی وجہ سے رکن قومی اسمبلی کا حلف نہ اٹھا سکیں۔

لندن میں ان کی متعدد سرجریز اور کیموتھراپیز ہوئیں اور کئی مرتبہ ان کی طبیعت سنبھلنے کے بعد پھر خراب ہوئی۔کلثوم نواز کو گزشتہ روز ایک مرتبہ پھر طبیعت بگڑنے پر ہسپتال منتقل کیا گیا لیکن وہ دوران علاج ہی انتقال کر گئیں۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور