ملک بھرمیں نواسہ رسول ﷺحضرت امام حسینؓ اورشہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کیا گیا ،یوم عاشور کے جلوس اختتام پذیر

ملک بھرمیں نواسہ رسول ﷺحضرت امام حسینؓ اورشہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش ...
ملک بھرمیں نواسہ رسول ﷺحضرت امام حسینؓ اورشہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کیا گیا ،یوم عاشور کے جلوس اختتام پذیر

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)آج پاکستان اور دنیا بھر میں رہنے والے مسلمانوں نے نواسہ رسولﷺ حضرت امام حسینؓ اور شہدائے کربلا کی قربانی کو خراج عقیدت پیش کیا، شہدائے کربلا کی یاد میں ماتمی جلوس نکالے گئے اور عزاداری کی رسم ادا کی گئی ۔

حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ اور ان کے ساتھیوں کی عظیم قربانی کی یاد میں دنیا بھر کی طرح ملک بھر میں یوم عاشور کے ماتمی جلوس نکالے گئے۔

سندھ کے صوبائی دارلحکومت کراچی میں عاشورہ کا مرکزی جلوس نشترپارک سے برآمد ہوکر روایتی راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ حسینیہ ایرانیاں کھارادر پر اختتام پذیر ہوا جبکہ حیدرآباد میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس امام بارگاہ قدم گاہ مولا علی سے برآمد ہواکر اپنے مقررہ راستوں سے ہوتا ہو ا اختتام پذیر ہوا۔

سندھ کے صوبائی دارلحکومت کراچی میں عاشورہ کا مرکزی جلوس نشترپارک سے برآمد ہوکر روایتی راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ حسینیہ ایرانیاں کھارادر پر اختتام پذیر ہوا جبکہ حیدرآباد میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس امام بارگاہ قدم گاہ مولا علی سے برآمد ہواکر اپنے مقررہ راستوں سے ہوتا ہو ا اختتام پذیر ہوا۔

لاہور میں شبیہ ذوالجناح کا مرکزی جلوس نثار حویلی اندرون موچی گیٹ سے گزشتہ شب برآمد ہوا، قبل ازیں نثار حویلی میں مجلس عزا ہوئی۔ ذوالجناح کا جلوس اپنے قدیمی راستوں سے گزرتا ہوا اذان فجر کے وقت چوک نواب صاحب پہنچاجہاں ماتم اور زنجیر زنی کی گئی۔ بعد ازاں جلوس چوہٹہ مفتی باقر، مسجد وزیر خان، کشمیری بازار سے رنگ محل پہنچا جہاں پر نماز ظہرین ادا کی گئی جس کے بعد جلوس اپنے روایتی روٹ صرافہ بازار، گمٹی بازار، ڈبی بازار، سید مٹھااور تحصیل بازار سے امام بارگاہ مبارک بیگم، بازار حکیماں،فقیر خانہ میوزیم سے ہوتا ہوا اونچی مسجد بھاٹی گیٹ پہنچاجہاں سے نماز مغرب کے بعد یہ بھاٹی چوک سے لوئر مال پر کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوگیا جہاں شام غریباں کی مجالس برپاہوئی۔راولپنڈی میں مرکزی جلوس امام بارگاہ عاشق حسین، امام بارگاہ کرنل مقبول اور ٹائروں والے امام بارگاہ سے برآمد ہوئے جبکہ کوئٹہ میں عاشورہ کا مرکزی جلوس علمدار روڈ سے برآمد ہوا جو اپنے مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا مومن آباد امام بارگاہ پر ختم ہوا۔پشاور میں یوم عاشور کے 12 جلوس برآمد ہوئے جن کی سکیورٹی کیلئے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ ملک کے دیگر چھوٹے بڑے شہروں میں یوم عاشور کے جلوس نکالے گئے جن میں عزاداری اور نوحہ خوانی کی گئی۔جلوسوں کے اختتام کے بعد شام غریباں اور مجالس منعقد کی گئیں جس میں نواسہ رسول اور شہدائے کربلا کی عظمت بیان کی گئی اور ان کی قربانیوں کا تذکرہ کیا گیا ۔یوم عاشورہ کے موقع ملک کے اکثر بڑے شہروں میں موبائل فون سروس معطل رہی ۔

مزید : اہم خبریں /قومی


loading...