استنبول میں سعودی سفارتخانے میں قتل ہونے والے جمال خاشقجی کی آخری لمحات میں ریکارڈ کی گئی ایک اور ریکارڈنگ سامنے آ گئیں ، ہنگامہ برپا ہو گیا

استنبول میں سعودی سفارتخانے میں قتل ہونے والے جمال خاشقجی کی آخری لمحات میں ...
استنبول میں سعودی سفارتخانے میں قتل ہونے والے جمال خاشقجی کی آخری لمحات میں ریکارڈ کی گئی ایک اور ریکارڈنگ سامنے آ گئیں ، ہنگامہ برپا ہو گیا

  


استنبول (ڈیلی پاکستان آن لائن)گزشتہ برس سعودی سفارتخانے میں قتل ہونے والے صحافی جمال خاشقجی کی ایک آخری لمحات میں ریکارڈ کی گئی ایک اور ریکارڈنگ سامنے آ گئی ہے جس نے ہر طرف ہنگامہ برپا کر دیاہے ۔

بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے ایک اخبارنے جمال خاشقجی کے آخری لمحات میں ریکارڈ کی گئی ریکارڈنگ کی تفصیلات جاری کی ہیں تاہم ابھی تک یہ واضح نہیں ہوسکاہے کہ یہ ریکارڈنگ انہیں کہاں سے ملی ہے ۔ترک اخبار کی اس نئی رپورٹ میں مبینہ طور پر جمال خاشقجی کے آخری الفاظ سے متعلق معلومات شامل ہیں۔ترک اخبار کی جانب سے جاری کی جانے والی تفصیلات کے مطابق سعودی قونصلیٹ میں داخل ہونے کے بعد جمال خاشقجی کو بتایا گیا کہ انٹرپول کے حکم کے مطابق انھیں ریاض واپس جانا ہو گا۔خاشقجی نے مبینہ طور پر اس گروپ کے احکامات ماننے سے انکار کیا جس پر انھیں کوئی نشہ آور چیز دی گئی۔خاشقجی نے مبینہ طور پر اپنے آخری الفاظ میں اپنے قاتلوں کو ان کا منہ بند نہ کرنے کی درخواست کی کیونکہ ان کو دمے کا مرض لاحق تھا لیکن اس کے بعد وہ اپنے ہوش میں نہیں رہے۔اخبار کی رپورٹ کے مطابق خاشقجی کے سر پر تھیلا ڈالا گیا جن سے ان کا دم گھٹ گیا، اس ریکارڈنگ میں مبینہ طور پر ہاتھا پائی کی آوازیں بھی موجود ہیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...