جعلی اکاؤنٹس کیس،وعدہ معاف گواہ ندیم الطاف کے بیان کی تفصیلات سامنے آگئیں

جعلی اکاؤنٹس کیس،وعدہ معاف گواہ ندیم الطاف کے بیان کی تفصیلات سامنے آگئیں

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جعلی اکاؤنٹس کیس میں وعدہ معاف گواہ ندیم الطاف کے بیان کی تفصیلات سامنے آگئیں،ندیم الطاف نے آصف زرداری، حسین لوائی،بلال شیخ اورطارق احسان کیخلاف بیان ریکارڈ کردیا،ملزم نے بیان ریکارڈ کراتے ہوئے کہا کہ زرداری کے فرنٹ مین حسین لوائی کے بینک کوجعلسازی سے فائدہ پہنچایاگیا،2 مئی 2016 کوبلال شیخ کے ہمراہ حسین لوائی سے ملاقات کی،ملاقات میں بینک کوفائدہ پہنچانے کاطریقہ طے پایا،ندیم الطاف نے کہا کہ حسین لوائی کی کمپنیوں کوسندھ بینک سے غیرقانونی قرض دیاگیا،کمپنیاں قرض کی رقم حسین لوائی کے بینک میں جمع کراتی تھیں،ساری مشق کامقصد حسین لوائی کے بینک کومالی فائدہ پہنچاناتھا،وعدہ معاف گواہ کا کہناتھا کہ قرض کی عدم ادائیگی کے باوجودکمپنیوں کوڈیفالٹ نہیں کیاگیا،ڈیفالٹ کے بجائے کمپنیوں کومزیداربوں روپے کاقرض دیاگیا،حکومتی بینک کوجعلسازی سے نقصان پہنچایاگیا،ندیم الطاف نے بیان ریکارڈ کراتے ہوئے کہا کہ سندھ بینک کے بلال شیخ،طارق احسان جعلسازی میں شامل تھے،مجھ پردباؤڈال کرقرض منظورکرائے گئے، ملزم نے کہا کہ حسین لوائی کی بے نامی کمپنی رابیکون کواربوں روپے دلوائے گئے،فراڈکا منصوبہ بلال شیخ نے تیارکیاتھا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...