جائیداد کے لالچ میں بھائیوں کا خون سفید ، سگی بہن کو 20 سال تک ایک کمرے میں قید کیے رکھا، کھانا کیسے دیا جاتا تھا؟ دلخراش داستان

جائیداد کے لالچ میں بھائیوں کا خون سفید ، سگی بہن کو 20 سال تک ایک کمرے میں قید ...
جائیداد کے لالچ میں بھائیوں کا خون سفید ، سگی بہن کو 20 سال تک ایک کمرے میں قید کیے رکھا، کھانا کیسے دیا جاتا تھا؟ دلخراش داستان

  


حافظ آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) جائیداد کے لالچ میں بھائیوں کا خون سفید ہوگیا، حافظ آباد میں سنگدل بھائیوں نے جائیداد کے لالچ میں اپنی سگی بہن کو 20 سال تک ایک کمرے میں قید کیے رکھا جس کو نجی ٹی وی کی نشاندہی پر بازیاب کرالیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق حافظ آباد میں سنگدل بھائیوں نے اپنی ہی سگی بہن کو جائیداد کے لالچ میں 20 برس تک ایک کمرے میں بند کیے رکھا۔ خاتون کو آج سے 20 برس قبل اس وقت قید کیا گیا تھا جب وہ 25 سال کی تھی ۔ 20 سال تک اس نے سورج کی روشنی تک نہ دیکھی اور نہ ہی کسی دوسرے انسان کی شکل دیکھ پائی۔

متاثرہ خاتون کو 45 سال کی عمر میں اس قید خانے سے بازیاب کرایا گیا ہے جس میں وہ اپنوں کے لالچ کی وجہ سے قید تھی۔ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے متاثرہ خاتون کو زخمی حالت میں بازیاب کراکے اس کے ایک بھائی کو گرفتار کرلیا ہے۔

خاتون کے کمرے سے لاتعداد تھیلیاں بھی ملیں جن کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ ان تھیلیوں میں کھانا ڈال کر خاتون کے کمرے میں پھینک دیا جاتا تھا۔

ڈی پی او حافظ آباد ساجد کیانی کا کہنا ہے کہ پولیس کو اس معاملے میں کچھ معلومات نہیں تھیں، یہ محلے داروں کی ذمہ داری بنتی تھی کہ وہ پولیس سے رابطہ کرتے لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا۔

وزیر انسانی حقوق پنجاب نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ بھائیوں کے خلاف سخت ایکشن لیں گے اور مظلوم خاتون کو انصاف دلائیں گے۔

مزید : انسانی حقوق /جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /حافظ آباد


loading...