موٹروے اجتماعی زیادتی کیس ، وزیر قانون کی سربراہی میں کمیٹی قائم، اس کے ذمے کیا کام لگایا گیا ہے؟

موٹروے اجتماعی زیادتی کیس ، وزیر قانون کی سربراہی میں کمیٹی قائم، اس کے ذمے ...
موٹروے اجتماعی زیادتی کیس ، وزیر قانون کی سربراہی میں کمیٹی قائم، اس کے ذمے کیا کام لگایا گیا ہے؟

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے موٹروے زیادتی کیس کی تحقیقات کیلئے وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت کی سربراہی میں ایک کمیٹی قائم کردی۔

وزیر قانون پنجاب کی سربراہی میں بننے والی 5 رکنی کمیٹی میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری برائے داخلہ، ایڈیشنل آئی جی سپیشل برانچ، ڈی آئی جی انویسٹی گیشن، ڈائریکٹر جنرل پی ایف ایس اے کو شامل کیا گیا ہے۔

یہ کمیٹی اس بات کا پتا لگائے گی کہ یہ واقعہ آخر پیش کس طرح آیا، وہ کون سے حالات تھے جو اس واقعے کی وجہ بنے۔ کمیٹی یہ بھی جائزہ لے گی کہ اس نوتعمیر شدہ لاہور سیالکوٹ موٹرے پر سکیورٹی اور نگرانی کیلئے کیا انتظامات کیے گئے تھے۔ یہ کمیٹی افسوسناک واقعے کی فرانزک تحقیقات کی بھی ذمہ دار ہوگی، اس کے علاوہ یہ پولیس کے ایمرجنسی رسپانس کا بھی جائزہ لے گی۔

یہ ہائی پروفائل کمیٹی مستقبل میں ایسے واقعات کے تدارک کیلئے تجاویز بھی پیش کرے ۔ کمیٹی 3 روز میں وزیر اعلیٰ پنجاب کو اپنی رپورٹ جمع کرانے کی پابند ہوگی۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -