نوشہرہ،دودھ فروشوں کیخلاف کریک ڈاؤن،متعدد کو بھاری جرمانے

  نوشہرہ،دودھ فروشوں کیخلاف کریک ڈاؤن،متعدد کو بھاری جرمانے

  

 نوشہرہ(بیورورپورٹ)صوبائی حکومت کی ہدایت پر ضلعی انتظامیہ نے دودھ فروشوں کے خلاف کریک ڈان کیمیکل اور پانی ملا دودھ فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف بھاری جرمانے تفصیلات کے مطابق صوبائی حکومت کی ہدایت پر ضلعی انتظامیہ نوشہرہ نے اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ جناب طلحہ زبیر اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر حلال فوڈ اتھارٹی نے نوشہرہ کینٹ بازار میں  مندرجہ ذیل دودھ کی دکانوں کا معائنہ کیا  کیمیکل  پانی ملا دودھ فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف  کارروائی کرتے ہوئے بھاری جرمانے عائد کیے عوام کو چاہیے کہ دودھ میں پانی مکس کرنے  والے دکانداروں سے دودھ نہ خریدیں ضلعی انتظامیہ نے دودھ فروشوں کا  دودھ  چیک کیا  جس کے نتائج درج ذیل ہیں۔1.  کسان دودھ شاپ نوشہرہ کینٹ: 0.25 پانی کی مقدار ٹھیک ہے.2.  راحت دودھ شاپ نوشہرہ کینٹ: 14.87 پانی کی مقدار ٹھیک نہیں.3. سیرت دودھ شاپ نوشہرہ کینٹ: پانی کی مقدار 8.71 فیصد قابل قبول ہے.4.زمیندار ڈیری فارم نوشہرہ کینٹ پانی کی مقدار 28.20 ٹھیک نہیں.5. اورنگزیب دودھ شاپ، پانی کی مقدار 34.54 فیصد ٹھیک نہیں.6. تراب خان دودھ شاپ، پانی کی مقدار 50 فیصد سے زیادہ ٹھیک نہیں.7. حمزہ دودھ شاپ، پانی کی مقدار 1.54 فیصد ٹھیک ہے.8. عرفان خان ڈیری شاپ، پانی کی مقدار 50 فیصد سے زیادہ، ٹھیک نہیں.  20 فیصد سے زائد پانی کی مقدار کی موجودگی کی صورت میں دودھ انسانی جسم کے لئے خطرناک ہیں۔ دودھ کی قیمت کریم کے ساتھ 100 روپے فی کلو  ہے۔   اکثر دودھ فروش دودھ سے کریم نکال کر بیچتے ہیں جو غیر قانونی ہے۔ شہریوں کو مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ 10 فیصد سے زیادہ پانی کی مقدار والے دکان والے سے دودھ نہ لیں.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -