نوشہرہ، ایس ایچ او اور 14پولیس اہلکاروں کی موجودگی میں خاتون کانسٹیبل قتل

نوشہرہ، ایس ایچ او اور 14پولیس اہلکاروں کی موجودگی میں خاتون کانسٹیبل قتل

  

 نوشہرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) نوشہرہ اکبرپورہ کے گنجان آباد علاقے علی شاہ میں ایلیٹ فورس کی لیڈی کانسٹیبل کو ایس ایچ او تھانہ اکبرپورہ اور پولیس اہلکاروں کے سامنے مسلح ملزمان نے اندھا دھند فائرنگ کرکے موت کے گھات اتار دیا۔ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نوشہرہ نجم الحسنین کے مطابق واقعہ میں ایلیٹ پولیس کی لیڈی کانسٹبل صفیہ خان موقع پر جاں بحق ہوگئی جبکہ اس کی چھوٹی بہن نیلم خان شدید زخمی ہو گئی۔ جاں بحق اور زخمی کو میاں راشدمموریل ہسپتال پبی منتقل کیاگیاتاہم حالت نازک ہونے کے باعث زخمی نیلم خان کو تشویش ناک حالت میں لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاور منتقل کردیاگیا۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نوشہرہ نجم الحسنین نے فوری ایکشن لیتے ہوئے ایس ایچ او تھانہ اکبرپورہ انسپکٹر بصیر خان سمیت 14 پولیس اہلکاروں کو فوری طور پر معطل کرکے لائن حاضر کردیااور ان کیخلاف پولیس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔نجم الحسنین کے مطابق مقتولہ لیڈی کانسٹبل صفیہ خان کے بھائیوں نے کچھ عرصہ قبل ملزم نذر محمد کے جواں سال بیٹے کو موت کے گھاٹ اتاردیاتھا جس کے بعد لیڈی کانسٹیبل اور اس کے ملزم بھائی گھر چھوڑ کر چلے گئے تھے۔ بعدازاں پشاور ہائیکورٹ نے لیڈی کانسٹبل صفیہ خان کی درخواست پر ان کے سربمہر گھر کو کھلوانے اور سامان لینے کا حکم دیا تھا۔ لیڈی کانسٹیبل صفیہ خان پولیس کے ہمراہ اپنے آبائی سیل گھر کو کھلوانے پہنچی تو مقتول نوجوان کی رشتہ دار خواتین نے شدید مزاحمت کی اور جھگڑا شروع کردیا۔اسی دوران ملزم نزر محمد نے ساتھیوں سمیت اندھا دھند فائرنگ کرکے کانسٹیبل صفیہ خان اور اس کی چھوٹی بہن نیلم خان کو شدید زخمی کردیا۔پولیس کے مطابق جاں بحق  صفیہ خان کی زخمی بہن نیلم خان کی مدعیت میں ملزم نزر محمد سمیت چار ملزما ن کے خلاف تھانہ اکبرپورہ میں قتل اقدام قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

 کانسٹیبل قتل 

مزید :

صفحہ اول -