فوجی عدالتوں میں زیر التواء مقدمات  کے فیصلوں میں تاخیر کانوٹس

  فوجی عدالتوں میں زیر التواء مقدمات  کے فیصلوں میں تاخیر کانوٹس

  

  ملتان (خصو صی رپورٹر) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں (بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

میں زیر التوا مقدمات کے فیصلوں میں بے جا تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے مانیٹرنگ جج جسٹس منظور احمد ملک نے صوبہ بھر کی انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے پریذائیڈنگ آفیسرز کا اجلاس 19 ستمبر کو ہائیکورٹ لاہور میں طلب کر لیا ہے اور پرفارمنس رپورٹ اور دیگر تفصیلات 16 ستمبر تک طلب کی ہیں۔ مانیٹرنگ جج نے تمام پریذائیڈنگ آفیسرز کو 20 جنوری سے 15 ستمبر تک کتنے مقدمات نمٹائے، زیر التواء  مقدمات کی تفصیل، لاہور ہائیکورٹ اور اسکے بنچز میں زیر سماعت اپیلوں کی سماعت کی تفصیل بھی طلب کی گئی ہے۔ مانیٹرنگ جج نے یہ بھی استفسار کیا کہ کیا انسداد دہشتگردی ایکٹ 1997 کی دفعہ 19 کی ذیلی دفعہ (7) غیر موثر ہو گئی ہے جس کے تحت اینٹی ٹیررازم کورٹس کے لئے مقدمات کا فیصلہ سات روز میں کرنا لازمی ہے اس کے علاوہ دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ 19 کی ذیلی دفعہ (8) اے پر عملدرآمد  نہ کرنے پر ہائیکورٹ نے پریزائیڈنگ آفیسرز کے خلاف کیا کارروائی کی۔

طل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -