موٹروے پر خاتون سے زیادتی کا ہولناک واقعہ، میڈیکل رپورٹ آ گئی 

موٹروے پر خاتون سے زیادتی کا ہولناک واقعہ، میڈیکل رپورٹ آ گئی 
موٹروے پر خاتون سے زیادتی کا ہولناک واقعہ، میڈیکل رپورٹ آ گئی 
کیپشن:    سورس:   courtesy: Social Media

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) موٹروے پر خاتون کے ساتھ ڈاکوﺅں کی بچوں کے سامنے جنسی زیادتی کے کیس میں سات مشتبہ افراد کا ڈی این اے ٹیسٹ کروا لیا گیاہے جبکہ خاتون کے ساتھ بھی میڈیکل میں زیادتی ثابت ہو گئی ہے ۔

نجی ٹی وی جیونیوز نے پولیس ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ زیادتی کا شکار خاتون کا میڈیکل کوٹ خواجہ سعید ہسپتال سے کرایا گیا جس میں خاتون سے زیادتی ثابت ہو گئی۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ تین کھوجیوں، پولیس اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں نے 5 کلومیٹر علاقے میں سرچ اینڈ سوئپ آپریشن کیا جس میں 20 کے قریب مشتبہ لوگوں کو حراست میں لے کر تفتیش کی گئی جب کہ 7 افراد کا ڈی این اے بھی کرایا گیا۔

پولیس ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ ایسٹرن بائی پاس پر جس جگہ خاتون کی گاڑی کھڑی تھی وہاں کوئی باڑ نہیں تھی، سی سی ٹی وی فوٹیجز سے بھی کوئی مدد نہیں ملی تاہم تین مقامات کی جیو فینسنگ کرکے ریکارڈ یافتہ ملزمان کی تلاش شروع کر دی گئی ہے۔

یاد رہے کہ 9 ستمبر کو لاہور کے علاقے گجر پورہ میں موٹر وے پر خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کا واقعہ پیش آیا۔اطلاعات کے مطابق دو افراد نے موٹر وے پر کھڑی گاڑی کا شیشہ توڑ کر خاتون اور اس کے بچوں کو نکالا،سب کو قریبی جھاڑیوں میں لے گئے اور پھر خاتون کو بچوں کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا۔

مزید :

قومی -