وزیراعظم اورپوری ریاست کی خاموشی ظلم،سی سی پی او اس بات پر حیران نہیں کہ۔۔۔مریم اورنگزیب نے عمر شیخ کو ہٹانے کا مطالبہ کرتےہوئے سوالات کی بارش کر دی

وزیراعظم اورپوری ریاست کی خاموشی ظلم،سی سی پی او اس بات پر حیران نہیں ...
 وزیراعظم اورپوری ریاست کی خاموشی ظلم،سی سی پی او اس بات پر حیران نہیں کہ۔۔۔مریم اورنگزیب نے عمر شیخ کو ہٹانے کا مطالبہ کرتےہوئے سوالات کی بارش کر دی
کیپشن:    سورس:   facebook/MarriyumA

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نےسی سی پی او لاہور کو ہٹانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ محافظ مجرموں کی حفاظت اورمعصوموں پر الزام لگاتے ہیں،سی سی پی او کہتے ہیں حیران ہوں خاتون ڈرائیور کیساتھ کیوں نہیں تھی؟سی سی پی او اس بات پر حیران نہیں کہ پولیس موقع پر کیوں نہیں پہنچی؟عمر شیخ کو فوری نوکری سے  نکالا جائے اور عبرت کا نشان بنایا جائے۔

نجی ٹی وی کے مطابق  ترجمان پاکستان مسلم لیگ ن اور سابق وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا موٹر وے پر اندوہناک واقعہ رونما ہونا اور خاتون کیساتھ زیادتی کا واقعہ انتہائی قابل مذمت ہے، محافظ مجرموں کی حفاظت اور معصوموں پر الزام لگاتے ہیں، سی سی پی او کہتے ہیں خاتون رات کو باہر کیوں نکلی؟ سی سی پی او خاتون نے پٹرول چیک کیوں نہیں کیا؟ سی سی پی او کہتے ہیں حیران ہوں خاتون ڈرائیور کیساتھ کیوں نہیں تھی۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا سی سی پی او اس بات پر حیران نہیں کہ پولیس موقع پر کیوں نہیں پہنچی، پولیس اس بات پر الجھی رہی کہ کس کی حدود ہے؟وزیراعظم اور پوری ریاست کی خاموشی ظلم ہے، سی سی پی او لاہور کا بیان مجرموں کا ساتھ دے رہا ہے، سی سی پی او کا بیان تحقیقات پر اثرانداز ہو رہا ہے، سی سی پی او کہتے ہیں خاتون فرانس سمجھ کر نکلی، سی سی پی او کہتے ہیں فرانس میں خواتین محفوظ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مشیر داخلہ شہزاد اکبر سی سی پی او کے بیان کا دفاع کر رہے ہیں، سی سی پی او نے وضاحت دیتے ہوئے کہا میرے بیان کا غلط مطلب لیا گیا، سی سی پی او صاحب! اس ماں کے ساتھ 3 بچے تھے، حفاظت آپ کی ذمہ داری تھی، لاڈلے نے سی سی پی او کو رکھنے کیلئے آئی جی پنجاب کو تبدیل کر دیا۔

مزید :

قومی -