انٹرنیٹ پر ’کتا‘ بن کر نوجوان لڑکی ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگی

انٹرنیٹ پر ’کتا‘ بن کر نوجوان لڑکی ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگی
انٹرنیٹ پر ’کتا‘ بن کر نوجوان لڑکی ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگی
کیپشن:    سورس:   Tiktok/puppygirljenna

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) انٹرنیٹ پر لوگ کئی طرح کے کام کرکے آمدنی کما رہے ہیں لیکن اس امریکی لڑکی نے ایک انوکھا ہی کام شروع کر رکھا ہے اور ماہانہ لاکھوں روپے کما رہی ہے۔ نیویارک پوسٹ کے مطابق اس 21سالہ لڑکی کا نام جینا فلپس ہے جو امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر آسٹن کی رہائشی ہے۔ جینا پیشے کے اعتبار سے آپٹیشن ہے۔تاہم اس نے 18ماہ قبل اضافی آمدنی کے لیے ’اونلی فینز‘ نامی ویب سائٹ پر اکاﺅنٹ بنا لیا جس پر تصاویر اور ویڈیوز ، گاہے فحش قسم کی تصاویر اور ویڈیو، صارفین کو فروخت کی جاتی ہیں۔ اونلی فینز پر اکاﺅنٹ بنانے کے بعد جینا کو اپنے بچپن کے شوق کے بارے میں خیال آیا۔ اسے بچپن ہی سے ’کتا‘ بننا پسند تھا۔ 

جینا کا خیال تھا کہ اگر وہ کتا بن کر اپنی ویڈیوز اور تصاویر اونلی فینز پر پوسٹ کرے تو وہ زیادہ مقبول ہوں گی اور اس کا خیال درست بھی ثابت ہوا۔ اب وہ گلے میں پٹہ ڈالتی ہے، کتے کی طرح پیالے میں کھاتی پیتی ہے اور ہاتھوں اور گھٹنوں کے بل گھر میں گھومتی پھرتی ہے۔ اپنے ان کاموں کی وہ ویڈیوز اور تصاویر بنا کر اونلی فینز پر پوسٹ کرتی ہے اور وہاں سے ماہانہ اوسطاً 10ہزار ڈالر (تقریباً 16لاکھ 61ہزار روپے) کما رہی ہے۔ جینا کا کہنا ہے کہ ”کتے جیسی حرکات کرنا اور کتا بن کر رہنا میری شخصیت کا حصہ ہے مگر میں نہیں جانتی تھی کہ میری شخصیت کا یہ پہلو لوگوں کو اتنا پسند آئے گا۔ جب سے میں نے اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر کتا بن کر ویڈیوز پوسٹ کرنی شروع کی ہیں میری مقبولیت بہت زیادہ بڑھ رہی ہے۔ ٹک ٹاک پر بھی مجھے 2لاکھ 16ہزار سے زائد لوگ فالو کر چکے ہیں اور اونلی فینز سے بھی میں اتنا کما رہی ہوں کہ اپنے آپٹیشن کے پیشے سے اتنا کمانے کا میں سوچ بھی نہیں سکتی تھی۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -