محکمہ بلڈنگ کو ختم کرکے مانیٹرنگ  اینڈ ایویلوایشن بنانے کی تجویز

محکمہ بلڈنگ کو ختم کرکے مانیٹرنگ  اینڈ ایویلوایشن بنانے کی تجویز

  

بہاولپور (بیورورپورٹ،ڈسٹرکٹ رپورٹر) کمیونیکشن اینڈ ڈویلپمنٹ (بقیہ نمبر15صفحہ6پر)

ڈیپارٹمنٹ ایک دفعہ بھی حکومتی تجربات کی زد میں آگیامحکمہ بلڈنگ (ایم اینڈ آر) کو ختم کر کے محکمہ مانیٹرنگ اینڈ ایویلوایشن بنانے کی تجویز دیدی گئی۔ چار ایس ایز کو ڈائریکٹر بنایا جائے گا جو لاہور، راولپنڈی، فیصل آباد اور ملتان ریجن میں کام کریں گے۔ موجودہ 14 ایکسین بلڈنگز (ایم اینڈ آر) میں سے 8 کو ان ریجنز میں بطور ڈپٹی ڈائریکٹر (ہائی وے) اور ڈپٹی ڈائریکٹر (بلڈنگز) تعینات کیا جائے گا۔ ہر زون میں دو ڈپٹی ڈائریکٹر ہوں گے۔ بقیہ 6 ایکسین  بلڈنگز (ایم اینڈ آر) کو ایس ای بلڈنگز کے ساتھ ایکسین (ہیڈ کوارٹر) بنایا جائے گا۔ موجودہ 30 ایس ڈی او بلڈنگز (ایم اینڈ آر) کو ان سب ڈویژنز میں ایس ڈی او بلڈنگز بنایا جائے گا جہاں بلڈنگز کنسٹرکشن کی پہلے سے سب ڈویژن موجود نہیں ہے۔ بلڈنگز ایم اینڈ آر کے کلیریکل / مینٹینینس سٹاف کو متعلقہ بلڈنگز کنسٹرکشن ڈویژن میں پوسٹ کیا جائے گا۔اسی طرح موجودہ چار ایس ای ہائی وے گوجرانوالہ، راولپنڈی، لاہور اور ملتان کو ڈائریکٹر سپیشل انیشی ایٹو (گریڈ 19) بنایا جائے گا۔ موجودہ بارہ ایکسین ہائی وے (ایم اینڈ آر) میں سے چار کو ڈپٹی ڈائریکٹر بنا دیا جائے گا جو ڈائریکٹر سپیشل انیشی ایٹو کے ساتھ کام کریں گے۔ 

تجویز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -