نشتر، سہولیات زیرو، دل کے مریضوں کو کارڈیالوجی ہسپتال بھجوانے کا انکشاف

 نشتر، سہولیات زیرو، دل کے مریضوں کو کارڈیالوجی ہسپتال بھجوانے کا انکشاف

  

   ملتان (  خصو صی  رپورٹر  )  نشتر ہسپتال کے شعبہ امراض دل میں مریضوں کے علاج کیلئے سہولیات ناپید  ہوگئیں (بقیہ نمبر61صفحہ6پر)

ایم آئی کے زیادہ تر مریضوں کو چوہدری پرویز الہی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی ریفر کرنے لگے۔تین سالوں سے انجیو گرافی مشین خراب پڑی ہے۔جبکہ ایکو کارڈیو گرافی بھی نہیں کی جارہی ہے۔جسکی وجہ سے مریضوں کو دل کے مرض کے علاج معالجہ میں شدید مشکات کا سامنا ہے۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے نشتر ہسپتال کو جنوبی پنجاب کے سب سے بڑے ہسپتال ہونے کا درجہ حاصل  ہے۔جہاں روزانہ ہزاروں کی تعداد میں ملک کے چاروں صوبوں سے مریض آتے ہیں۔لیکن اس بڑے ہسپتال میں شعبہ امراض دل میں دل کے مریضوں کیلئے طبی سہولیات ناپید ہیں۔جسکی وجہ سے مریضوں کو علاج کیلئے پرویز الہی کارڈیالوجی ہسپتال بھیجوائے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔اس کے علاہ شعبہ امراض دل میں انجیو گرافی اور ایکو کارڈیو گرافی  کی مشینیں گزشتہ تین سالوں سے خراب پڑی ہیں۔جسکی مالیت ڈیڑھ کروڑ روہے سے زائد بنتی ہے۔اور مریضوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔مریضوں سے صحت کے اعلی حکام سے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔اور نشتر کے شعبہ امراض  دل میں دل کی بیماریوں سے متعلق علاج کی سہولیات فراہم کیں جائیں۔تاکہ عوام کو دھکے نا کھانے پڑے۔

انکشاف

مزید :

ملتان صفحہ آخر -