ملتان،اغواء کے بعد بچی قتل،6روز بعد لاش کھیت سے برآمد

  ملتان،اغواء کے بعد بچی قتل،6روز بعد لاش کھیت سے برآمد

  

   ملتان (  خصو صی  رپورٹر  )  تھانہ شاہ شمس کے علاقے الخلیل کالونی میں 7سالہ بچی عروج فاطمہ کے اغوا کا معاملہ  اغوا ہونے والی بچی کی لاش 6 روز بعد تھانہ سیتل ماڑی کے علاقے میں کھیتوں سے ملی اتوار کے روز بچی کو گھر کے باہر گلی سے اغوا کیا گیا پولیس تھانہ سیتل ما(بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

ڑی نے بچی کی لاش نشتر ہسپتال منتقل کردیا ہے ایس ایچ او تھانہ سیتل ماڑی راجہ الطاف کے مطابق پوسٹمارٹم کے بعد مزید شواہد سامنے آئیں گے دوسری جانب بچی کے والد قیصر عباس اور والدہ شکیلا بی بی غم سے نڈھال ہیں جن کا کہنا ہے کہ پولیس کی نا اہلی کی وجہ سے بچی کا قتل ہا ہے بچی کو ایک علاقے سے دوسرے علاقے میں لیجایا گیا، راستے میں میٹرو بس منصوبے کے کیمروں سمیت دوسرے کیمروں کی مدد سے چھان بین کی جا سکتی تھی لیکن پولیس نے کوشش ہی نہیں کی بلکہ یہ کہہ دیا تھا کہ تمہاری بچی نہر میں ڈوب گئی ہوگی، وقوعہ کے تیسرے روز ریسکیو کے غوطہ خوروں کے زریعے نہر میں سرچنگ کر کے بیٹھ گئے تھے، والدین نے وزیر اعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب سے ملزمان کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا کا مطالبہ کردیا ہے وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کا ملتان کے علاقے شاہ شمس سے اغوا کے بعد 7سالہ بچی کے قتل کے واقعہ کا نوٹس آر پی او ملتان سے رپورٹ طلبافسوسناک وآقعہ میں ملوث ملزم کی جلد گرفتاری کا حکم۔متاثرہ خاندان کو ہرصورت انصاف فراہم کیا جائے وزیر اعلی عثمان بزدار کا لواحقین سے دلی ہمدردی اور اظہار افسوس متاثرہ خاندان کو انصاف فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

اغواء

مزید :

ملتان صفحہ آخر -