موسلا دھار بارش، نشیبی علاقے زیر آب، 6افراد جاں بحق، بجلی، ٹریفک کا نظام درہم برہم

    موسلا دھار بارش، نشیبی علاقے زیر آب، 6افراد جاں بحق، بجلی، ٹریفک کا نظام ...

  

لاہور،اسلام آباد(کرائم رپورٹر، جنرل رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) لاہور،اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف شہروں میں موسلا دھار بارش سے موسم تو خوشگوار ہو گیا،لیکن چھتیں گرنے، کرنٹ لگنے،آسمانی بجلی گرنے سمیت دیگر مختلف حادثات میں بچوں،خاتون سمیت 6افراد جاں بحق جبکہ درجنوں زخمی ہو گئے، انڈر پاسز اور سڑکوں پر پانی جمع، نشیبی علاقوں میں پانی گھروں میں داخل ہو گیا۔ لاہور میں 215 سے زائد فیڈرز ٹرپ کر گئے، 40سے زائد ٹرانسفارمر نے کام چھوڑدیا،متعدد علاقے بجلی سے محروم ہونے کے سبب شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ لاہور میں ہونے والی طوفانی بارش سے شہر کے نشیبی علاقے پانی ڈوب گئے یہاں تک کے جنرل ہسپتال،سروسز ہسپتال کے تہہ خانے پانی سے بھر گئے۔جنرل ہسپتال کا یہ عالم تھا کہ بارشی پانی وارڈوں میں داخل ہو گیا اور بیڈز پانی میں تیرتے رہے جس سے لاکھوں روپے کی ادویات و ساز و سامان خراب ہو گیا۔لکشمی چوک میں گاڑیاں بارشی پانی میں ڈوب گئیں جبکہ دیگر شہر کے علاقوں میں جل تھل سے سڑکیں،فٹ پاتھ،گلیاں ایک ہو گئے۔بارش کے باعث شہر کے بازاروں میں بھی مندے کا سماع رہا جبکہ شہر کے بیشتر علاقوں میں بارشی پانی اور بوندا باندی سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا۔لاہور کے علاقوں مال روڈ، جوہر ٹاؤن، گارڈن ٹاؤن، سمن آباد اور ریلوے سٹیشن میں تیز بارش سے نشیبی علاقوں میں پانی جمع ہو گیا۔ بھاٹی گیٹ، بلال گنج، موہنی روڈ اور شملہ پہاڑی کے علاقوں میں بھی بادل خوب برسے جبکہ گڑھی شاہو، باغبانپورہ اور دو موریہ پل کے علاقوں میں بھی سڑکوں پر پانی جمع ہونے سے شہریوں کو آمدورفت میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔کاہنہ سرائیچ گاوں میں گھر کی خستہ حالت چھت گر گئی جس کے نتیجے میں 3 بچے جاں بحق ہوگئے۔ تاج علی نے گھر میں بانس کی چھت ڈال رکھی تھی جو شدید بارش کے باعث گرگئی۔ چھت گرنے سے گھر میں موجود 8 ماہ کا طیب موقع پر جاں بحق ہوگیا جبکہ 5 سالہ ارم، 7 سالہ مناہل اور 14 سالہ رمضانہ شدید زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں ارم اور عادل جانبر نہ ہوسکے اور دم توڑ گئے۔ رمضانہ زخمی حالت میں ہسپتال میں زیر علاج ہے۔اوکاڑہ کے نواحی علاقہ جبوکہ چوک کے قریب تیز بارش کے باعث ایک مکان کی چھت گرگئی چھت کے نیچے30سالہ فوزیہ زوجہ شہنازاس کی 5سالہ بیٹی فاطمہ اور 4سالہ اسماعیل سویاہواتھا جوچھت گرنے سے شدید زخمی ہوگئے اطلاع ملتے ہی ریسکیو1122نے کوئیک ریسپانس دیتے ہوئے چھت کے ملبے تلے دبی خاتون اوراس کے بچوں کوبحفاظت باہر نکال لیا جنہیں ابتدائی طبی امدا فراہم کرنے کے بعد علاج معالجے کے لئے ہسپتال منتقل کردیاگیاہے۔اوکاڑاکے چک نمبر2/4Lاوکاڑہ کارہائشی 7سالہ احمد بارش ختم ہوتے ہی کھیلنے کے لئے گھر سے باہر گلی میں نکل گیا کھیلتے کھیلتے اسے بجلی کے پول سے کرنٹ لگنے سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا۔بچے کی اچانک وفات پر اس کے گھر میں صف ماتم بچھ گئی پورا گاؤں بچے کی اچانک موت پر غمزدہ ہوگیا مرنے والابچہ 2بہنوں کااکلوتا بھائی تھا۔چونیاں کے نواحی گاؤں بھاگو کے آرائیاں میں آسمانی بجلی گرنے سے 47 سالہ اشرف نامی چرواہا جاں بحق ہو گیا جبکہ گجر چوک چونیاں میں خستہ حال چھت گر گئی ملبے تلے آ کر تین بچوں کی ماں 45 سالہ شاہدہ بی بی خالق حقیقی سے جا ملی، مقامی انتظامیہ نے زابطے کی کاروائی کے بعد لاشوں کو وارثان کے سپرد کر دیا۔مانگامنڈی میں آسمانی بجلی گرنے سے لاکھوں روپے مالیت کے چار مویشی ہلاک، مانگامنڈی کے نواحی گاؤں جئے کا ٹبہ میں دوران بارش آسمانی بجلی گرنے سے دو محنت کشوں کی  لاکھوں روپے مالیت کی قیمتی بھینسیں اور بکریاں ہلاک ہوگئی ہے جبکہ ایک شخص جھلس کر شدید زخمی ہوگیا ہے۔ لاہور کے علاوہ شیخوپورہ اور قصور سمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں بھی موسلا دھار بارش ہوئی۔ کراچی اور پشاور میں بھی برکھا رت نے موسلم دلفریب بنا دیا، پی ڈی ایم اے نے سندھ بھر میں الرٹ جاری کردیا  بلوچستان کے ضلع کوہلو کے ندی نالوں میں طغیانی کی صورت حال درپیش ہے۔

بارش،ہلاکتیں 

مزید :

صفحہ اول -