ختم نبوتؐ کا تحفظ مسلمانوں کااجتماعی عقیدہ ہے،علماء

  ختم نبوتؐ کا تحفظ مسلمانوں کااجتماعی عقیدہ ہے،علماء

  

لاہور(جنرل رپورٹر)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیراہتمام عشرہ ختم نبوت منانے کا سلسلہ جاری ہے۔ ماہ ستمبرتحریک ختم نبوت کے حوالے سے ملک بھر میں  مختلف پروگرامز جاری ہیں اور شہداء ختم نبوت اورتحریک ختم نبوت 1974ء کے محرکین کو خراج تحسین پیش کیا جارہا ہے۔ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت لاہور کے مبلغ مولانا عبدالنعیم، خطیب مرکز ختم نبوت جامع مسجد عائشہ مولانا محبوب الحسن طاہر، قاری محمداقبال، مولانا مسعود احمد، قاری عبدالسلام، قاری فضل الرحمن، قاری عبدالعزیز نے عشرہ ختم نبوت کے حوالے سے خطبات جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں کا اجماعی عقیدہ ہے کہ رسول اکرم ؐ اللہ تعالی کے آخر ی نبی اور رسول ہیں۔آپ ؐ کے بعد قیامت تک کیلئے کوئی نبی نہیں آئے گا۔نبوت کا دروازہ بند ہو چکا۔ اسلام اور پاکستان کی بقا عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں مضمر ہے۔علماء کا کہنا تھا کہ امت کا اس پر اجماع ہے کہ ختم نبوت ﷺ کا منکر دائرہ اسلام سے خارج ہے۔

 انہو ں نے مزید یہ بھی کہاکہ علماء ومشائخ نے ہر دور میں منکرین ختم نبوت اور مدعیان ختم نبوت کو منہ توڑ جواب دیا۔ انہوں نے کہا کہ 7ستمبر 1974ء کا دن ہماری قومی اورملی تاریخ میں خاص اہمیت کاحامل ہے،اس دن مسلمانوں کے دیرینہ مطالبے پر اس وقت کی قومی اسمبلی نے قادیانیوں کو آئینی اور پارلیمانی بنیاد پر غیر مسلم اقلیت قرار دینے کا تاریخ ساز فیصلہ کیا۔یہ یاد گار فیصلہ مسلمانوں کی طویل جدوجہد کانتیجہ تھا۔ ماہ ستمبر قادیانیوں کے لئے ستم گر ثابت ہوا۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ قادیانیوں کی تبلیغی سرگرمیوں پر پابندی عائد کی جائے۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -