بوائے فرینڈ کی اپنے چار دوستوں کے ساتھ مل کر لڑکی سے کار میں اجتماعی زیادتی

بوائے فرینڈ کی اپنے چار دوستوں کے ساتھ مل کر لڑکی سے کار میں اجتماعی زیادتی
بوائے فرینڈ کی اپنے چار دوستوں کے ساتھ مل کر لڑکی سے کار میں اجتماعی زیادتی
سورس: File

  

چنائی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست تامل ناڈو میں ایک شخص نے اپنی ہی گرل فرینڈ کو دوستوں کے ساتھ مل کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق موبائل شاپ پر کام کرنے والی 20 سالہ لڑکی کی کچھ روز پہلے گناسیلن نامی نوجوان سے ملاقات ہوئی جس کے بعد دونوں ایک دوسرے کے انتہائی قریب آگئے۔ گناسیلن نے لڑکی کو یقین دلایا کہ وہ اسے پرائیویٹ کمپنی میں اچھی نوکری دلا دے گا۔

نوکری کا جھانسہ دے کر گناسیلن کار میں لڑکی کو اپنے ساتھ لے گیا۔ راستے میں اس نے لڑکی کو سافٹ ڈرنک میں نشیلی دوا پلا دی جس سے وہ بیہوش ہوگئی۔ اس کے بعد ملزم نے اپنے چار دوستوں کو بلالیا اور لڑکی کے ساتھ کار میں ہی اجتماعی زیادتی کی۔

ہوش آنے پر متاثرہ لڑکی نے مزاحمت کی اور کار کا شیشہ توڑنے کی کوشش کی۔ یہ منظر مقامی لوگوں نے دیکھا تو وہ کار کی طرف بڑھے تاہم ملزمان کار کو وہاں سے بھگا کر لے گئے اور لڑکی کو بنگلورو ہائی وے پر پھینک کر فرار ہوگئے۔ مقامی لوگوں نے لڑکی کو ہسپتال پہنچایا جہاں اس کا علاج جاری ہے۔ دوسری جانب پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے پانچوں ملزمان کو گرفتار کرکے ان کے خلاف اجتماعی زیادتی کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -