90مستحق ملازمین کو نکال کر750افراد کو ملازمت دینے کی تحقیقات کی جائے

90مستحق ملازمین کو نکال کر750افراد کو ملازمت دینے کی تحقیقات کی جائے

لاہور ( سپیشل رپورٹر) صدر مملکت آصف علی زرداری کی طرف سے شروع کی جانے والی مفاہمت کی سیاست کا سب سے زیادہ نقصان بھی پیپلز پارٹی نے اٹھایا اور اس کے بہت سے متحرک جیالوں کو پیپلز پارٹی کے ساتھ وفاداری نبھانے کی پاداش میں نوکرےوں سے نکال دیا گیا تھا لیکن پیپلز پارٹی کے کارکنوں پر چھائے بدقسمتی کے سائے اس کی اپنی حکومت کے دوران بھی مکمل طور پر چھائے رہے اور پیپلز پارٹی کے مختلف محکموں سے جبری طور پر نکالے گئے ملازمین بھی بحال نہ ہوسکے۔نیشنل فرٹیلائزر ٹریڈرز کارپوریشن آف پاکستان( این ایف سی) سے نکالے جانیوالے 90ملازمین جن میں پیپلز پارٹی لاہور کے نائب صدر فضل الرحمن بٹ‘ مقصود احمد ‘ ارشاد ‘ عادل رضا ‘ عمر فاروق‘ شاہد محمود اور اعجاز احمدسمیت دیگر نے اپنے دستخطوں کے ساتھ سیکرٹری الیکشن کمیشن کے نام ایک خط لکھا ہے اور ان سے مطالبہ کیا ہے کہ ادارے کے چیرمین کی طرف سے نکالے گئے ملازمین کو فی الفور بحال کیا جائے اور انکی جانب سے رکھے گئے 750ملازموں کو فارغ کیا جائے ان ملازمین نے اپنے خط میں لکھا ہے کہ ہم نوے ملازمین کو ادارے پر بوجھ قرار دیتے ہوئے نکالا گیا تھا لیکن ےہ کیسا بوجھ ہے کہ ہمیں نکال کر 750 ملازمین کو رکھ لیا گیا ان ملازمین نے الیکشن کمیشن آف پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ ہمیں انصاف مہیا کیا جائے اور سیاسی بنیادوں پر بھرتی ہونیوالے افراد کو نکال کر ہمیں بحال کیا جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1