مجاہد کامران کی دلچسپی نے تاریخ ادبیات کی 5جلدوں کی دوبارہ اشاعت ممکن بنائی: خواجہ زکریا

مجاہد کامران کی دلچسپی نے تاریخ ادبیات کی 5جلدوں کی دوبارہ اشاعت ممکن بنائی: ...

لاہور (ادبی رپورٹر) پنجاب یونیورسٹی کے ادارہ تاریخ ِ ادبیات ِ مسلمانانِ پاک وہند کے ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر خواجہ محمد زکریا نے کہا ہے کہ موجودہ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر مجاہد کامران کی تحقیق وتنقید میں دلچسپی نے تاریخ ِ ادبیات کی پانچ جلدوں کی دوبارہ طباعت واشاعت کے کام کو آسان بنایا۔ پانچ جلدیں چھپ کر مارکیٹ میں آگئی ہیں۔ عام قارئین ادب بھی یہ تمام جلدیں رعایتی نرخوں پر انارکلی میں واقع یونیورسٹی کے سیل ڈپو سے خرید سکتے ہیں۔ تاریخ ِ ادبیات کی چھٹی جلد کی تیاری کا کام بھی شروع ہوگیا ہے جس میںپہلی پانچ جلدوں کی تلخیص ہوگی۔ روزنامہ ”پاکستان“ سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر خواجہ محمد زکریا نے مزید کہا کہ قیمت کم کرنے سے پنجاب یونیورسٹی کی کتابوں کی فروخت بڑھ گئی ہے۔ تاریخ ِ ادبیات کے فی الحال پندرہ سو سیٹ چھاپے گئے ہیں جن میں سے 600فروخت ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہیں اس عہدے پر کام کرتے ہوئے تقریباً ساڑھے تین سال ہوگئے ہیں اس عرصے میں انہوں نے وہ تمام کام مکمل کرلیا جس کی انہوں نے ذمہ داری اٹھائی تھی۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ ِ ادبیات مسلمانانِ پاک وہند بلاشبہ ایک ایسی کتاب ہے جس پر پنجاب یونیورسٹی فخر کرسکتی ہے۔ شاید یہی وجہ ہے کہ اس کی مانگ میں اضافہ ہورہا ہے۔

مزید : صفحہ آخر