مشرف کی ایک لمحے کی آزادی ، آئین و عدلیہ کی آزادی کی توہین ہے: بیرسٹر امجد ملک

مشرف کی ایک لمحے کی آزادی ، آئین و عدلیہ کی آزادی کی توہین ہے: بیرسٹر امجد ملک
مشرف کی ایک لمحے کی آزادی ، آئین و عدلیہ کی آزادی کی توہین ہے: بیرسٹر امجد ملک

  

لندن ( بیرورپورٹ ) پاکستان کے سابق فوجی صدر پرویز مشرف کیخلاف غداری کا مقدمہ درج کرنے کیلئے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے والے پاکستانی نژاد برطانوی قانون دان بیرسٹر امجد ملک اس مقدمے کی پیروی اور دلائل دینے کیلئے اتوار کو پاکستان پہنچ رہے ہیں اور پیر کو سپریم کورٹ میں دلائل دیں گے ۔ ۔ ان کے ساتھ بین الاقوامی قانونی ماہرین اور صحافی بھی جائیں گے ۔ یاد رہے کہ بیرسٹر امجد ملک برطانیہ یورپ میں عدلیہ کی آزادی کی تھریک چلانے میں بھی پیش پیش تھے اور اُن دعوت پر چیف جسٹس نے برطانیہ کا دورہ بھی کیا تھا۔ بیرسٹر امجد ملک نے ’ پاکستان ‘ کو بتایا کہ پرویز مشرف نے آئین توڑا اور ملکی سالمیت داﺅ پر لگائی لیکن پا کستان کی جمہوری حکومتیں مصلحت اور مجبوریوں کی وجہ سے غداری کا مقدمہ نہیں چلاسکیں جس پر انہوں نے آئین توڑنے اور عدلیہ پر شب خون بھی مارنے کے اقدام پر پرویزمشرف کے کیخلاف عدلیہ سے رجوع کیا ہے جبکہ عدلیہ ججز کیس میں واضح اور مختلف مواقع پر کھل پر پرویز مشرف کو آئین توڑنے کا مرتکب قراردے چکی ہے ۔ اب عدلیہ کے پاس اپنے فیصلے کی عملی توثیق کا وقت ہے کہ وہ پرویز مشرف کیخلاف نہ صرف غداری کا مقدمہ درج کروائے بلکہ عدالت میں ہی اسے ہتھکڑیاں بھی لگائے تاکہ آئین توڑنے والوں کو عبرت مل سکے جبکہ اس سے پہلے عدلیہ اپنے آئینی و قانونی اختیارات استعمال کرتے ہوئے ایک منتخب وزیراعظم کو نااہل دے کر ثابت کر چکی ہے کہ آئین و عدلیہ کی توقیر نہ کرنے والے کی سزا کیا ہے ۔ اب عدالتی فیصلے خود عدلیہ کے سامنے ہیں کہ وہ ایک غدار کے خلاف فیصلہ کرتے وقت کسی مصلحت کا شکار ہوتی ہے یا اپنی آزادی و خود مختاری برقرار رکھتی ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں بیرسٹر امجد ملک نے کہا کہ پرویز مشرف نے ایک غیر ملکی انٹرویومیں امریکہ کوپاکستان میں ڈرون حملوں کی اجازت دینے کا اعتراف بھی کرلیا ہے جبکہ ان حملوں کیخلاف خود امریکہ میں تحریک چل رہی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسے آئین شکن شخص کو الیکشن لڑنے کی اجازت دینا تو درکنار ایک لمحے کیلئے آزاد چھوڑنا بھی جمہوریت اور آئین کی آزادی کی نفی ہے ، پاکستانی عدالتوں میں ایسے افراد سے نرمی برتنے سے قانون شکنوں کی حوصلہ افزائی ہوگی ۔

مزید : قومی