سگریٹ میں نیل پالش ریموور، چوہے مارزہرسمیت خطرناک کیمیکل شامل کیے جانے کاانکشاف

سگریٹ میں نیل پالش ریموور، چوہے مارزہرسمیت خطرناک کیمیکل شامل کیے جانے ...
 سگریٹ میں نیل پالش ریموور، چوہے مارزہرسمیت خطرناک کیمیکل شامل کیے جانے کاانکشاف

  



 نیویارک ( آن لائن ) سگریٹ نوشی صحت کیلئے خطرناک اور متعدد بیماریوں کا سبب بننے کی باتیں تو ہم سب نے سن رکھی ہیں مگر ایک تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ ایک سگریٹ اتنے خطرناک چیزوں سے بھرا ہوتا ہے جسے کوئی بھی ’ہوش کی حالت‘ میں منہ لگانا پسند ہی نہیں کرسکتا۔

سموک فری فارسیٹھ نامی ویب سائٹ نے انکشاف کیا ہے کہ ایک سگریٹ میں نیل پالش ریموور سے لیکر چوہے مارنے کا زہر تک نہ جانے کتنے خطرناک کیمیکلز شامل ہیں،ایک سگریٹ چار ہزار سے زائد کیمیکلز کا مرکب ہوتا ہے جن میں سے اکثر اس زہریلے فضلے سے ملتے جلتے ہیں جنہیں مشکل سے ہی تلف کیا جا سکے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اس میں ایسٹون جو نیل پالش ریموور میں استعمال ہوتا ہے، ٹوائلٹ صاف کرنے والا ایمونیا، سنکھیا یا آرسینک زہر، پینٹ، میتھین گیس، کاربن مونو آکسائیڈ مومی کیمیکل سیٹرک ایسڈ، نکوٹین اور دیگر قابل ذکر ہیں۔

واضح رہے کہ سنکھیا زہر چوہے مارنے کیلئے استعمال ہوتا ہے جبکہ کاربن مونو آکسائیڈ ایک زہریلی گیس ہے جو کینسر کا سبب بھی بنتی ہے۔اس کے علاوہ سیگریٹ میں فور ملاڈی ہائیڈ بھی موجود ہوتا ہے جو مردہ جانوروں کو محفوظ کرنے کیلئے استعمال کیا جانے والا کیمیکل ہے۔

مزید : تعلیم و صحت