رہائشی اسکیموں میں غیر قانونی تعمیرات ، انتظامیہ خاموش

رہائشی اسکیموں میں غیر قانونی تعمیرات ، انتظامیہ خاموش

لاہور (عامر بٹ سے)لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی حدود میں آنے والی ہاؤسنگ سکیموں میں غیرقانونی تعمیرات کا سلسلہ زور و شورسے جاری ہے،گھروں پر اپنی حدود سے باہر بنائے گئے شیڈ اور تجاوزات نے ایل ڈی اے حکام کی کارکردگی کو عیاں کر دیا ہے جہاں منظور شدہ نقشے سے بڑھ کر تعمیرات کے خلاف کوئی سنجیدہ کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی ۔جن سوسائٹیوں میں قوانین اور نقشے سے ہٹ کر تعمیرات ہور ہی ہیں ان میں کینال گارڈن،ڈاکٹر ٹاؤن ،ا لقدوس ، منشاء ٹاؤن،منورٹاؤن،گرین روڈ،میاں ٹاؤن،اشرفی ٹا ؤن ،کینال ویو فیز 2،گرین پارک،سمن زار کالونی،،الحفیظ ٹاؤن،ایل ڈی اے ویلفیئر سوسائٹی ،رانا ٹاؤن،سرشار ٹاؤن ،سیف ٹاؤن،جمال ٹاؤن،سرور کالونی،عبداللہ ٹا ؤ ن،دیپ وادی،خدیجہ پارک،طاہر ٹاؤن،الحمد پا ر ک ، جمیل ٹاؤن ، گلزار احباب،گلشن پارک،نیونیشنل ٹا ؤ ن ، مصطفی پارک ، جلال پارک،احمد نگر،اتفاق سٹی ڈبن پورہ ، عامر پارک،حسن ٹاؤن ،انوار ٹاؤن،نیو ٹاؤن،کبیر ٹاؤن ، جناح پارک،محبوب پارک،ہجویری ٹاؤن،ایڈن ولاز ،ایجسٹن سوسائٹی ،کینا ل برک سوسائٹی،اسٹیٹ لائف ہاؤسنگ سوسائٹی ،پاک ٹاؤن ،پرائم ہاؤسنگ سکیم،علی وومز ہاؤسنگ سکیم،آئیڈیل گارڈن ہاؤسنگ سکیم،اٹاری پاک ہاؤسنگ سکیم،الہدیٰ ہاؤسنگ سکیم،،شیر شاہ کالونی ،پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ہاؤسنگ سکیم،گرین اقراء ہاؤسنگ سکیم ،گلشن شفیق ٹاؤن،ایلیٹ ٹاؤن ہاؤسنگ سکیم،پیراگون ہاؤسنگ سکیم،گرین سٹی ہاوسنگ سکیم،تاج باغ،ہجویری ٹاؤن،آصف کالونی،نیوکینال پارک،عمر ٹاؤن ،کینال پوائنٹ ،کینال بینک سکیم،نذیر گارڈن،عامر گارڈن ارشد ٹاؤن،امام ٹاؤن،کینال بینک سکیم،فدا ویلاز،حنیف پارک،گلستان کالونی،حسین پارک،گریژن سکیم،طیب ٹاؤن ،الطاف کالونی،بہادر کالونی،ابراہم گارڈن،علی ٹاؤن،میاں امیر الدین پارک،شامی ٹاؤن، گلزار مدینہ گارڈن،لاہور میڈیکل ہاؤسنگ سکیم فیز1،لاہور میڈیکل ہاؤسنگ سکیم فیز2،لاہور میڈیکل ہاؤسنگ سکیم فیز3،خیبر ٹاؤن،رضوان گارڈن، اشرف گارڈن،علی عالم ٹاؤن ،طیب گارڈن،عطا ٹاؤن،علی ٹاؤن،ستار ٹاؤن، گلشن حیدر،شریف گارڈن،گلشن یٰسین،آصف کالونی،گلبہار ٹاؤن،ہلال ٹاؤن،نیو جلو ہاؤسنگ سکیم ،آدم ٹاؤن،ملک وحید پارک،مدینہ ہومز،شمع پارک،رحمت ٹاؤن،آئی بی ایل ہومز،رحمن گارڈن عبداللہ گارڈن،عزیز گارڈن نور گارڈن ،پنجاب یونیورسٹی ہاؤسنگ سکیم شامل ہیں ،ایل ڈی اے ذرائع کے مطابق مستقبل قریب میں بھی ان سکیموں میں غیر قانونی تجاوزات کے خلاف آپریشن کے کوئی امکانات نہیں ہیں ،ماضی طرز پر چھوٹے چھوٹے اور چند سوسائٹیوں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1