چند عناصر ذاتی مفادات کی خاطر ملک کی ترقی میں زحنہ ڈالنا چاہتے ہیں ، شہباز شریف

چند عناصر ذاتی مفادات کی خاطر ملک کی ترقی میں زحنہ ڈالنا چاہتے ہیں ، شہباز ...

 لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ وزیراعظم محمد نواز شریف کی قیادت میں ملک امن، ترقی، خوشحالی اور روشنیوں کے سفر پر گامزن ہے اور فلاح عامہ کے منصوبوں کے ساتھ توانائی کے منصوبوں پر شفافیت اور تیز رفتاری سے کام کیا جا رہا ہے۔ وزیراعلیٰ شہبازشریف نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے منتخب نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دھر نا سیاست نے عوام کی ترقی اور خوشحالی میں بے پناہ رکاوٹ ڈالی ہے اور دھرنوں کی وجہ سے چینی صدر کا دورہ ملتوی ہوا جس سے اربوں ڈالر کے معاہدوں میں تاخیر ہوئی اور ملکی معیشت کو بہت نقصان پہنچا۔ اگر چینی صدر کا دورہ ملتوی نہ ہوتا تو ملک سے اندھیرے دور ہو چکے ہوتے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ترقی اور خوشحالی کے مخالفین کو عوام عام انتخابات اور بلدیاتی الیکشن میں بری طرح مسترد کر چکے ہیں لیکن اب یہی عناصر ذاتی مفادات کی خاطر عام آدمی کی خوشحالی او رملک کی ترقی میں رخنہ ڈالنا چاہتے ہیں۔پاکستان کے باشعور عوام ایسے عناصر کو پہلے بھی مسترد کر چکے ہیں اور اب بھی ان کے بہکاوے میں نہیں آئیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کسی بھی طور پر احتجاجی سیاست کا قطعاً متحمل نہیں ہو سکتا۔ یہ وقت ذاتی مفادات کی سیاست کا نہیں بلکہ ملک و قوم کی خدمت کا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے نہایت قابل اعتماد دوست چین نے ہماری معیشت کو سنبھالا دینے کیلئے 46 ارب ڈالر کا تاریخی پیکیج دیا ہے جو پاکستانی عوام کیلئے ایک انمول تحفہ ہے۔ ہمیں اس شاندار موقع سے بھرپور فائدہ اٹھانے کیلئے متحد ہو کر آگے بڑھنا ہے۔ انہو ں نے کہا کہ چائنہ پاکستان اکنامک کوریڈور ترقی اور خوشحالی کا ضامن ہے جس کے تحت منصوبوں پر تیزی سے کام جاری ہے اور ان منصوبوں کی تکمیل سے نہ صرف ملکی ترقی میں خاطرخواہ اضافہ ہوگا بلکہ عام افراد کیلئے بھی روزگار کے لاکھوں مواقع پیدا ہوں گے۔ پاکستان کے باشعور عوام کسی کو بھی ترقی و خوشحالی کے سفر میں رکاوٹ نہیں ڈالنے دیں گے اور ایسے عناصر کے مذموم عزائم پہلے کی طرح اب بھی ناکام رہیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف سے اسلام آباد میں چیئرمین ایگزم بنک امریکہ مسٹر فریڈ پی ہاچ برگ ی قیادت میں بنک کے اعلی حکام کے وفد نے ملاقات کی ۔ جس میں تجارت،اقتصادی اورترقیاتی منصوبوں میں سرمایہ کاری کے حوالے سے بات چیت ہوئی۔وفد نے پاکستان میں سرمایہ کاری کے حوالے سے دلچسپی کا اظہار کیا ۔پاکستان میں امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل بھی ملاقات میں موجود تھے ۔وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف امریکہ کے ایگزم بنک کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب کے مختلف علاقوں میں توانائی کے متعدد منصوبوں پر تیزرفتاری سے کام جاری ہے ۔توانائی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے مختلف ذرائع سے توانائی کے حصول کے منصوبوں کوبرق فتاری سے پایہ تکمیل تک پہنچایا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ صوبے بھر میں عوامی فلاح و بہبود اور انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ کے منصوبوں پر کام کیا جارہا ہے اور متبادل توانائی کے ذرائع کے استعمال سے ملک میں انرجی کی ضروریات پوری کرنے کے پراجیکٹ مکمل کیے جا رہے ہیں۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کے شاندار مواقع موجود ہیں اورسرمایہ کاروں کو ہر ممکن سہولتیں فراہم کی جارہی ہیں۔ وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کی قیادت میں ملک میں اقتصادی ترقی کی رفتار تیز ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی پرکشش ترغیبات اور سرمایہ کاری کے لیئے انتہائی سازگار ماحول کی وجہ سے عالمی مالیاتی ادارے اور مختلف ممالک پاکستان کو سرمایہ کاری کے لیئے ترجیح دے رہے ہیں، جس سے کاروبار اور روزگار میں اضافے کے نئے مواقع پیدا ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مستحکم مالیاتی پالیسیوں کی وجہ سے ملک میں تجارتی اور صنعتی ترقی کا عمل تیزی سے جاری ہے اور اس کے قومی معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کا محور و مرکز عام آدمی کی خوشحالی ہے اور اس سلسلے میں ہر ممکن کوششیں بروئے کار لائی جا رہی ہیں۔ ملاقات کے دوران وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے سوشل سیکٹر میں بہتر سہولیات کی فراہمی اور سماجی و اقتصادی ترقی کے لیئے مقررہ اہداف اور ان کے حصول کے لیئے اٹھائے گئے اقدامات کا بھی ذکر کیا۔ چیئرمین ایگزم بنک نے پاکستان میں سرمایہ کاری میں دلچسپی ظاہر کرتے ہوئے حکومت کے اقتصادی ترقی اور معاشی استحکام کی پالیسیوں کو سراہا۔امریکی وفد میں امریکی قونصل جنرل زیچرے ہارکن رائڈر(Mr.Zachary Hakenrider ) 249امریکی ٹریڈ فنانس کے نائب صدر انیتے بی ماریش (Ms.Annette B Maresh )249 سنیئر نائب صدر ٹریڈ فنانس مسٹر سکاٹ پی سلیجل (Mr.Scot.P.Schloegel )، ڈائریکٹر شیڈولنگ کرسٹوفر ایم سیمنز (Mr.Christopher M.Semenas ) اور دیگر امریکی سفارت کار شامل تھے جبکہ وفاقی سیکرٹری واٹر اینڈ پاور محمد یونس 249 سیکرٹری اکنامک افیئر ڈویژن طارق باجوہ 249 چیئرمین پی اینڈ ڈی 249 صوبائی سیکرٹری انرجی 249 سی ای او این پی پی سی ایل اور ڈی جی ایل ڈی اے بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیر صدارت یہاں اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں پاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ و ریسرچ سنٹر کے منصوبے کے بعض امور پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لاہور میں کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ اینڈ ریسرچ سینٹرکا منصوبہ صحت کی معیاری سہولتوں کی فراہمی میں سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ گردے و جگر کے امراض کے جدید علاج کے حوالے سے یہ ادارہ سٹیٹ آف دی آرٹ ہوگا اور اس ادارے میں غریب، نادار اور مستحق مریضوں کے مفت علاج کی سہولت میسر ہوگی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ میڈیکل سائنس، کلینیکل ریسرچ اور طبی سہولتوں کی فراہمی کے حوالے سے ایک عظیم شاہکار بنے گا اور اس کا شمار دنیا کے اعلیٰ ترین معیار کے عین مطابق ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ انسٹی ٹیوٹ میں گردے اور جگر کے مریضوں کو جدید ترین طبی سہولتیں ایک چھت تلے میسر آئیں گی۔ ڈاکٹروں، نرسوں اورپیرا میڈیکل سٹاف کیلئے انڈرگریجوایٹ اورپوسٹ گریجوایٹ سطح کی میڈیکل ایجوکیشن کی سہولت بھی ادارے میں میسر ہوگی۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ منصوبے کیلئے قومی جذبے اورمحنت سے کام کیا جائے اور متعلقہ صوبائی ووفاقی ادارے منصوبے کے حوالے سے امور کو تیز رفتاری سے آگے بڑھائیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت صحت عامہ کی سہولتوں کی بہتری کیلئے عملی اقدامات اٹھارہی ہے ۔ غریب آدمی کو معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی پر ہر ممکن وسائل صرف کئے جارہے ہیں ۔ منصوبے کی تکمیل سے گردے اور جگر ٹرانسپلانٹ کی سہولت دستیاب ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ کا منصوبہ صحت عامہ کی سہولتوں میں ایک شاندار اضافہ ہوگا اور پنجاب حکومت کے سابق منصوبوں کی طرح یہ منصوبہ بھی اعلیٰ معیاراور شفافیت کا شاہکار ہوگا۔ مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق،چےئرمین بورڈ آف گورنرزپاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ ڈاکٹر سعید اختر، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، سیکرٹریز قانون، تعمیرات و مواصلات، سپیشلائزڈ ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن، ہاؤسنگ، کمشنر لاہور ڈویژن، چیف ایگزیکٹو آفیسر انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ اتھارٹی، ایم ڈی نیسپاک،ایم ڈی سوئی گیس، چیف ایگزیکٹو آفیسر لیسکو اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید : صفحہ اول