کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کا ہندوستانی قیدی دل کادورہ پڑنے سے جاں بحق

کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کا ہندوستانی قیدی دل کادورہ پڑنے سے جاں بحق
کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کا ہندوستانی قیدی دل کادورہ پڑنے سے جاں بحق

  


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کا ہندوستانی قیدی کرپال سنگھ ہلاک ہو گیا ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سزائے موت کے 55 سالہ قیدی کرپال سنگھ کی اچانک طبیعت خراب ہوئی تو جس کے بعد اسے طبی امداد کے لیے جناح ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ دم توڑ گیا۔

پولیس نے لاش کو تحویل میں لے کر پوسٹ ماڑٹم کے لیے مردہ خانے بھجوا دیا ہے۔ کرپال سنگھ 1991 میں فیصل آباد ریلوے اسٹیشن پر ہونے والے بم دھماکے میں ملوث تھا اور کوٹ لکھپت جیل میں سزا کاٹ رہا تھا۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

پولیس کا کہنا ہے کہ اس کی موت دل کا دورہ پڑنے سے ہوئی ہے۔ خیال رہے کہ 2008 میں پاکستان نے ایک ہندوستانی باشندے کشمیر سنگھ کو رہا کیا تھا جو پاکستان میں 35 سال جیل میں رہا۔ اس پر پاکستان میں ہندوستان کے لیے جاسوسی کا الزام تھا۔ کشمیر سنگھ کو اس وقت کے انسانی حقوق کے وزیر انصار برنی کی اپیل پر اس وقت کے صدر جنرل (ر) پرویز مشرف نے عام معافی دی تھی تاہم ہندوستان جاکر کشمیر سنگھ نے اعتراف کیا کہ وہ پاکستان میں ہندوستان کے لیے جاسوسی کرتے تھے۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

مزید : لاہور /اہم خبریں