الطاف حسین نے ”را “کے ساتھ تحریری معاہدہ کیا ،جس کا مقصد پاکستان کے حالات خراب کرنا تھا :سابق برطانوی ہیڈ آف مشن

الطاف حسین نے ”را “کے ساتھ تحریری معاہدہ کیا ،جس کا مقصد پاکستان کے حالات ...
الطاف حسین نے ”را “کے ساتھ تحریری معاہدہ کیا ،جس کا مقصد پاکستان کے حالات خراب کرنا تھا :سابق برطانوی ہیڈ آف مشن

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)برطانوی حکومت کے سابق ہیڈ آف مشن شہریار خان نیازی نے کہا ہے کہ الطاف حسین نے تحریری طور پر بھارتی خفیہ ”ایجنسی “سے معاہدہ کیا تھا جس کا مقصد پاکستان کے حالات خراب کرنا تھا۔اس معاہدے کے تحت الطاف حسین کو پاکستان کے مختلف اداروں کی معلومات بھارت کو پہنچانے،بلوچستان میں باغیوں کی تحریکوں کے لیے سہولت کاری اور دیگرپاکستان مخالف سرگرمیوں کا ٹاسک ملاتھا ،معاہدے کا یہ ڈاکیومنٹ بہت ہی حساس نوعیت کا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ برطانوی حکومت نے سابق وزیرداخلہ رحمان ملک کو الطاف حسین کے را کے ساتھ تعلقات سے آگاہ کردیا تھا ۔شہریار خان نے چیلنج کیا اگر ایم کیو ایم یا رحمان ملک میرے خلاف قانونی چارہ جوئی کرنا چاہتے ہیں تو میں تیار ہوں کیو نکہ میں نے تمام باتیں ثبوتوں کی بنیاد پر کی ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ الطاف حسین مجھ پر جھوٹے ہونے کا الزام لگا یا ہے ،اس الزام پرالطاف حسین 7دنوں میں مجھ سے معافی مانگیں ورنہ ثبوت منظر عام پر لانا شروع کردوں گا ۔ان کا کہنا ہے کہ الطاف حسین کی ایک ای میل بھی ریکارڈ کا حصہ ہے جس میں انہوں نے ”را“کا شکریہ ادا کیا ،کوئی الطاف حسین سے پوچھے کہ انہوں نے ”را“کا شکریہ کیو ادا کیا ۔

نجی نیو چینل جیو نیوز کے پروگرام ”آج شہازیب خانزادہ کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے شہریار خان نیازی نے کہا کہ الطاف حسین کی برطانوی افسر سے ملاقات ہوئی تھی جس میں انہوں نے قبول کیا تھا کہ تھاکہ وہ را کے لیے کام کرتے ہیں ،الطاف حسین نے بتا یا تھا کہ ان کا”را “کے ساتھ تحریری معاہدہ کیا ۔اس پر برطانوی افسر نے کہا مجھے یہ باتیں ریکارڈ کرنا پڑیں گی اور الطاف حسین نے بیان ریکارڈ کرانے پر رضامندی ظاہر کردی ،جس کے بعد یہ ملاقاتیں ریکارڈ کا حصہ بن گئیں۔شہریار خان نیازی نے کہا کہ الطاف حسین کے بہت سے رہنماﺅں کو نہیں پتہ کہ وہ کیا کر رہے ہیں اور اگر کراچی میں کسی رہنما کو اس بارے میں علم ہو تو مجھے حیرانی ہو گی ۔انہوں نے کہا کہ دبئی میں میٹنگ ہوئی تھی جس میں محمد انور اور طارق میر نے کراچی کے رہنماﺅں کو ”را“ کے سا تھ تعلقات کے بارے میں آگا ہ کیا تھا ،دبئی سے واپسی پر متحدہ کے تین چار رہنماﺅں نے مجھ سے رابطہ کر کے الطاف حسین کے ”را“ تعلقات کے بارے میں پوچھا جس پر میں نے ان تعلقات کی تصدیق کی ۔شہر یار خان نیازی نے کہا کہ برطانوی حکومت نے رحمان ملک کو بھی الطاف حسین کے ”را“سے تعلقات کے بارے میں آگاہ کیا تھا لیکن پاکستانی حکومت کی جانب سے اس بات پر خاموشی اختیار کی گئی تھی ۔

مزید : قومی /اہم خبریں