روس کی معروف ماڈل کو جسم فروشی کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا

روس کی معروف ماڈل کو جسم فروشی کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا
روس کی معروف ماڈل کو جسم فروشی کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا

  

ماسکو (ڈیلی پاکستان آن لائن )روس کی معروف ماڈل ماریہ سزانو ا کو جسم فروشی کا دھندہ کرنے پر گرفتار کر لیا گیا ۔جواں سالہ ماڈل کے دوستوں کا کہنا ہے کہ نائٹ کلب میں مینجر کے طور پر کام کرتی تھی اور پھر وہ اچانک غائب ہو گئی ۔ماریہ کو آخری مرتبہ بحرین کے انٹرنیشنل ائیر پورٹ پر اس کی دوست وکٹوریہ کے ساتھ دیکھا گیا تھا جس کے بعد سے وہ غائب ہے ۔روسی میڈ یا کے مطابق ماریہ زندہ ہے اور اسے جسم فروشی کا دھندہ کرنے کے شبہ میں اردن سے گرفتار کیا گیا ۔

معروف برطانوی سیاستدان اور سیلفی کوئین کیرین ڈائنزک کو سوتیلے بھائی کی جانب سے جنسی تشدد کا نشانہ بنائے جانے کا انکشاف

ماریہ جس ماڈلنگ ایجنسی کے لیے کام کرتی تھی اس کے نمائندے نے تصدیق کی ہے کہ ماریہ کو گرفتار کیا گیا ہے ،ان کا کہنا ہے کہ ماریہ کو بحرین کے ایک امیر شخص نے جھانسہ دے کر جسم فروشی کے دھندے میں ملوث کیا ۔انہوں نے بتا یا کہ ماریہ دو جگہ پر کام کرتی تھیں ۔ماریہ کی والدہ کا کہنا ہے کہ ان کی بیٹی کا پتہ چل گیا ہے اور اب سب ٹھیک ہے۔انہوں نے اپنے خدشے کا اظہار کیا کہ ماریہ کو ایک گینگ نے پھنسا یا جو جسم فروشی کے لیے دھندے کے لیے دنیا بھر کی خواتین جھانسے دیتے ہیں ۔دوسری جانب روسی سفارتخانے کا کہنا ہے کہ ماریہ کو غیر قانونی سرگرمیوں میں پائے جانے پر اردن سے ڈی پورٹ کردیا گیا ہے ۔

مزید :

تفریح -