نہروں کی بھل صفائی، پانی سپلائی میں مزید تاخیر کا خدشہ 

نہروں کی بھل صفائی، پانی سپلائی میں مزید تاخیر کا خدشہ 

  

  ملتان(سپیشل رپورٹر) شدید گرمی کے باعث فصلوں کیلئے نہری پانی کی اشد ضرورت کے باوجود محکمہ انہار شجاع آباد کے افسران کی مجرمانہ غفلت اور روایتی سستی کے باعث ششمائی نہروں کی بھل صفائی نہروں کی سپلائی بحال ہونے سے ایک ہفتہ قبل شروع کردی ہے جس سے سرکار کے کروڑوں ر وپے ضائع ہونے کااندیشہ پیدا ہوگیاہے ششمائی نہریں گزشتہ 6 ماہ کی بندی کے دوران صاف نہیں کی(بقیہ نمبر15صفحہ6پر)

 جاسکیں اب جبکہ 15اپریل کوسپلائی بحال ہونا تھی اس سے ایک ہفتہ قبل بھل صفائی کاکام شروع کردیا گیا ہے جس کے باعث ششماہی نہروں میں پانی کی سپلائی میں مزید تاخیر کا ندیشہ پیدا ہوگیا ہے۔ تاخیر سے شروع ہونے والی بھل صفائی کے حوالے سے  یہ بھی  انکشاف ہوا ہے کہ ایکسین شجاع آباد کی ذاتی ملکیتی مشینری بھی بھل صفائی میں استعمال کیا جارہی ہے کیونکہ مذکورہ بھل صفائی کے کام کی چیکنگ سپلائی جاری ہونے کی وجہ سے نہیں ہوسکے گی اس طرح سرکارکاکروڑروں روپے کے فنڈز خورد بردہونے کاامکان ہے کینال ایکٹ کے مطابق ششمائی نہریں 15اکتوبر سے 15 اپریل تک مسلسل بندرہتی ہیں اس دوران 6ماہ میں نہروں کی بھل صفائی اچھی طرح کی جاسکتی ہے مگر افسران کی روایتی سستی اور جان بوجھ کروڑوں روپے خورد برد کرنے کی پلاننگ کاانکشاف ہوا ہے اس سلسلے میں مذکورہ ایکسین سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی مگر رابطہ نہیں ہوسکا اس حوالے سے متعلقہ ایس ای حویلی کینال سرکل کا کہنا ہے کہ بھل صفائی کام کی چیکنگ ضرور کی جائے گئی چاہے پانی کی سپلائی ایک ہفتہ مزید موخر کرنا پڑی تو کریں گے جبکہ ایکسین شجاع آباد کینال ڈویژن کی ذاتی ملکیتی مشینری کے استعمال کے بارے میں کوئی معلومات نہیں ہے اس حوالے سے بھی پڑتال کی جائے گئی اور مشینری ڈویژن حکام سے بھی پوچھا جائے گا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -