بوریوالا میں ڈاکوؤں کا عید سیزن شروع،ناکے، لوٹ مار

بوریوالا میں ڈاکوؤں کا عید سیزن شروع،ناکے، لوٹ مار

  

بورے والہ (تحصیل رپورٹر)تحصیل بورے والہ میں ڈکیتیوں اور چوریوں کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ہے اس سلسلے میں گزشتہ  ایک ہفتہ کے دوران متعدد چوری اور ڈکیتی کی وارداتیں ہو چکی ہیں اور تاحال وارداتوں کا یہ سلسلہ جاری ہے۔چوک شاہ جنید میں نامعلوم چوروں نے پانچ دوکانوں کا صفایا کر دیا۔چوروں نے دوکانوں کی چھتیں پھاڑ کر لاکھوں روپے نقدی اور قیمتی سامان چوری کر لیا اور فرار ہو گئے۔الحفیظ سینیٹری سٹور پر ہوئی ڈکیتی کی واردات میں دوکان مالک محمد اسرار سے ہزاروں روپے لوٹ لی گئی اور مسلح ڈاکو فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے(بقیہ نمبر8صفحہ6پر)

 O بلاک میں واقع واٹر فلٹریشن کی دکان پر 2 نامعلوم مسلح افراد نے دوران ڈکیتی عبدالاحد سے ہزاروں روپے نقدی چھین لی اور فرار ہو گئیمیاں ٹاون کے قریب واقع موبائل شاپ پر ڈکیتی کی واردات میں دوکان مالک شاہد محمود سے اسلحہ کے زور پر 25 ہزار روپے نقدی چھین لی گئی اور ملزمان فرار ہو گئے شہر کے وسط بھٹی پلازہ کے قریب واقع الیکٹرانکس کی دکان میں ڈکیتی کی ایک اور واردات میں دکان مالک ذیشان عابد مسیح سے دو نا معلوم ڈاکووں نے اسلحہ کے زور پر ہزاروں روپے چھین لیئے اور فرار ہو گئے۔پٹھان چپل ہاوس پر ہوئی ڈکیتی کی واردات میں دکان مالک سعید اللہ خان سے دو نا معلوم مسلح افراد نے ہزاروں روپے نقدی لوٹ لی اور جاتے ہوئے دوکان سے قیمتی جوتیاں بھی لے گئے چک نمبر 261 کے قریب رکشہ سوار خواتین کو اسلحہ کے زور پر ڈکیتی کا نشانہ بنانے والے ملزمان واردات کے بعد فرار ہو گئے اسی طرح  لاہور روڈ پر موٹر سائیکل سوار میاں بیوی کو اسلحہ کے زور پر موبائل فون سے محروم کر دیا گیا گؤ شالہ نوری مسجد کے خادم کو اسلحہ کے زور پر مسجد کے اندر حجرے میں لے جا کر کنپٹی پر پسٹل رکھ کے پینتیس سو روپے نقدی سے محروم کر دیا گیا گزشتہ روز معصوم شاہ روڈ کے رہائشی شہباز کو نامعلوم ڈاکووں نے گرین ٹاون بوریوالا کے قریب زبردستی اسلحہ کے زور پر روک لیا اور گن پوائنٹ پر 2 لاکھ 38 ہزار روپے چھیننے کے بعد فائر مار کر شدید زخمی کر دیا اور موقع سے فرار ہوگئے زخمی کو ٹی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دیا  گیا جہاں زخمی کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔سرکل میں بڑھتی ہوئی ڈکیتی کی وارداتوں نے شہر میں خوف و ہراس اور عدم تحفظ پا یا جاتا ہے یہاں پر یہ یاد رہے کہ چند روز پہلے ناکے پر نا رکنے کی وجہ سے  ڈیوٹی پر مامور پولیس ملازم نے جب موٹر سائیکل سواروں کا پیچھا کیا تو نا معلوم ملزمان نے پیچھا کرنے پر پولیس ملازم کو بھی فائر مار کے زخمی کر دیا تھا اور سرکاری موٹرسائیکل چھین کر فرار ہو گئے تھے پولیس ملازم  پر ہی فائرنگ کا دوسرا واقع ڈی بلاک میں پیش آیا جہاں موٹر سائیکل پر سوار دو مسلح ملزمان نے پولیس اہلکاروں کے روکنے پر مزاحمت کرتے ہوئے فائرنگ شروع کر دی اور پولیس اہلکاروں کو چکمہ دے کر فرار ہو گئے۔ تھانہ ماڈل ٹاون پولیس نے پولیس اہلکار منیر کی مدعیت میں اقدام قتل سمیت سنگین دفعات کے تحت مقدمہ درج کر کے کاروائی شروع کر دی ہے ذرائع کا بتانا ہے کہ پولیس ملازمین پر فائرنگ میں ملوث دونوں وارداتوں کے ملزمان گرفتار کر لیئے گئے ہیں جبکہ دوسری طرف ڈکیتی اور چوری کی وارداتوں کا شکار ہونے والے شہریوں کا کہنا ہے کہ سرکل تھانہ جات میں عام شخص کی کوئی شنوائی نہیں ہے اور پولیس ڈکیتی کی ایف آئی آر کا اندراج کرنے سے کتراتی ہے اور خصوصا ڈی ایس پی بورے والہ  شہریوں کے ساتھ ناروا سلوک رواں رکھے ہوئے ہے شہریوں نے ڈی پی او وہاڑی  آر پی او ملتان سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر بڑھتی ہوئی وارداتوں کو کنٹرول کیا جائے اور شہریوں کو  یقینی تحفظ فراہم کیا جائے۔

لوٹ مار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -