حکومتی اتحادکے سینئر رہنما عہدہ ملنے کیلئے پر امید،سوشل میڈیا پر پیغامات

حکومتی اتحادکے سینئر رہنما عہدہ ملنے کیلئے پر امید،سوشل میڈیا پر پیغامات

  

  میلسی (نامہ نگار) حکومتی اتحادکی تمام پارٹیاں 2018 کے الیکشن میں میلسی سے ناکام ہوئیں جس کے بعد ان کا وفاقی کا بینہ میں بطور وفاقی وزیر  شریک ہونا ناممکن ہے کیونکہ این اے 165 سے سابق ایم این اے الحاج سعید احمد خان منیس ہار گئے تھے۔اس لیے (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

وفاقی وزارت اگر ضلع وہاڑی سے کسی کو ملی تو بورے والا کے سید ساجد سلیم مہدی یا چوہدری فقیراحمد ایم این ایز کو مل سکے گی وہاڑی میں بھی قومی نشست پر اپوزیشن پارٹیاں ہار گئی تھیں البتہ وفاقی حکومت چاہے گی تو الحاج سعید احمد خان منیس یا تہمینہ دولتانہ سابق ایم این ایز وفاقی مشیر بنائے جا سکتے ہیں اسی طرح پیپلز پارٹی سے ہارے ہوئے سابق ایم این ایمحمود حیات خان عرف ٹوچی خان کی وفاقی وزارت کا امکان 2018 کا الیکشن ہارنے کی وجہ سے موجود نہیں تاہم۔وفاقی مشیر لیے جا سکتے ہیں۔ فیس بک پر تاہم جیالوں نے گور نر پنجاب کے لیے دو ناموں مخدوم احمد محمود اور محمود حیات خان عرف ٹوچی خان کی نامزدگی کا دعوی  کیا ہے    ۔

پیغامات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -