سکھر،گرمیوں کی آمد کیساتھ ہی مچھروں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا 

سکھر،گرمیوں کی آمد کیساتھ ہی مچھروں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا 

  

سکھر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)گرمیوں کی آمد کیساتھ ہی مچھروں کی تعداد میں اضافہ، مچھروں سے بچنے کیلئے مچھر دانیوں کی خریداری میں اضافہ، سڑک کنارے لگے رنگ برنگے مچھر دانیوں کے اسٹال خریدوں کی توجہ کا مرکز بن گئے، انتظامیہ کا مچھروں کی پیداوار پرقابو نہ پانا ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملک کے دیگر شہروں کی طرح سکھر میں بھی گرمی میں اضافے کیساتھ ہی مچھروں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوجاتا ہے موسم گرما کے دنوں میں مچھروں سے بچنے کے لئے مچھردانیوں کا استعمال بڑھ جاتا ہے اور سڑک کنارے لگے رنگ برنگے مچھر دانیوں کے اسٹال خریدوں کی توجہ کا مرکز بن جاتے ہیں سکھر شہر کے مختلف علاقوں مینارہ روڈ،ایوب گیٹ،ملٹری روڈ و دیگر شاہراوں اور سڑکوں کے کنارے رنگ برنگی چھوٹی بڑی مچھر دانیاں سج جاتی ہیں اور مچھروں سے تنگ شہری کو خریداری کیلئے ٹھہرناپڑتا ہے سڑکوں کنارے مچھر دانی خریدنے کے شہریوں کو دہرے فائدے ہوتے ہیں، ایک تو بازار جانیکی جھنجھٹ سے بچ جاتے ہیں دوسری قیمت مناسب ہوتی ہے خریداروں کا کہنا ہے رات کے وقت مجبورا بچوں کے لئے مچھر دانی خریدنی پڑتی ہے شہر میں مچھروں کی بہتات کی وجہ سے مچھر دانیوں کی طلب میں اضافہ ہوگیا ہے وہیں مچھر دانی فروشوں کی چاندی ہو گئی ہیدکان دارکے مطابق گرمی میں مچھر زیادہ ہو جاتے ہیں اور لوگ باہر نکل آتے ہیں جس کی وجہ سے ہمارا کام بھی تیزی سے شروع ہو جاتا ہے، 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -