’شہباز شریف کے وزیر اعظم بننے کے باوجود نواز شریف فوری طور پر وطن واپس نہیں آئیں گے کیونکہ ۔۔۔‘ بڑا دعویٰ

’شہباز شریف کے وزیر اعظم بننے کے باوجود نواز شریف فوری طور پر وطن واپس نہیں ...
’شہباز شریف کے وزیر اعظم بننے کے باوجود نواز شریف فوری طور پر وطن واپس نہیں آئیں گے کیونکہ ۔۔۔‘ بڑا دعویٰ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) میاں شہباز شریف کے وزیراعظم پاکستان بننے کے باوجودمیاں نواز شریف کی لندن سے فوری طور پر واپس آنے کا کوئی امکان نہیں۔ ڈیلی ڈان کے مطابق شہباز شریف کے وزیراعظم بننے پر مسلم لیگ ن کے کچھ رہنماءبہت خوش ہیں اور چاہتے ہیں کہ ان کے پارٹی قائد جلد ان کے درمیان ہوں تاہم ان کا ماننا ہے کہ نواز شریف کی پاکستان کی پرواز بک کروانے میں متعدد عوامل کارفرما ہیں۔

نواز شریف کی واپسی کے متعلق بات کرتے ہوئے بہت سے ن لیگی رہنماﺅں نے کہا ہے کہ ”پارٹی کے کارکنان اور رہنماءشہباز شریف کو ملک کا وزیراعظم دیکھ کر بہت خوش ہیں اور ساتھ ہی وہ چاہتے ہیں کہ آئندہ دنوں میں نواز شریف ان کے ساتھ ہوں۔ تاہم نواز شریف کا فوری وطن واپسی کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔ شریف خاندان کا ماننا ہے کہ ان کی جلد واپسی پر پاکستان تحریک انصاف کو پروپیگنڈے کا موقع مل جائے گا کہ انہیں صحت کا کوئی سنجیدہ مسئلہ نہیں ہے۔“

لیگی رہنماﺅں کا کہنا تھا کہ ”نواز شریف کے وطن واپس نہ آنے میں تاخیرکی ایک اور وجہ یہ ہے کہ 11پارٹیوں کے اتحاد سے بننے والی حکومت آئندہ مہینوں میں الیکشن سے قبل کس طرح پی ٹی آئی پر دباﺅ بناتی ہے۔ “ نواز شریف کی واپسی کی تاریخ سے متعلق ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ایک لیگی رہنما ءکا کہنا تھا کہ وہ شاید آئندہ انتخابات یا اس کے بعد وطن واپس آئیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر نواز شریف کو کرپشن کیسز میں کچھ ریلیف ملتا ہے تو پارٹی ان پر مسلم لیگ ن کی انتخابی مہم چلانے کا دباﺅ ڈالے گی کیونکہ عمران خان کی انتخابی مہم کو کمزور کرنے کے لیے نواز شریف کا ن لیگ کی مہم میں شامل ہونا بہت ضروری ہو گا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -