کسی کی تکلیف کم ہے کسی کی زیادہ۔۔۔

کسی کی تکلیف کم ہے کسی کی زیادہ۔۔۔
کسی کی تکلیف کم ہے کسی کی زیادہ۔۔۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

تحریر :سید ظہیر رضوی

زندگی ایک جہد مسلسل کا نام ہے.

ہر کوئی کسی نہ کسی طرح کی جدوجہد کررہا ہے.

کوئی بیماری سے جنگ لڑ رہا, کوئی غربت, کوئی بے بسی, کوئی ناگہانی پریشانی,

 ہر کسی کے حصے میں ایک جدوجہد ہے.

کسی کے حصے کی تکلیف کم ہے کسی کی زیادہ،

پر سب سے زیادہ مشکل میں وہ ہیں جو بےبس ہیں حالتِ جنگ میں ہیں

 یا وہ جو زندگی کے لیے سانسوں کے محتاج ہیں.

کسی ایسی تکلیف کا شکار ہے جو انہیں اعصابی اور ذہنی طور پر مفلوج کر رہی ہے.

پھر بھی بات سہل کرنے کی ہی ہےکہ وہ کیسے بہادری اور یقینِ کامل کے ساتھ جدوجہد کررہے ہیں.

فرق صرف سوچ کا ہے یا رویوں کا.

کسی کو اپنی تکلیف سب سے زیادہ لگتی ہےاور کوئی دنیا کے غم دیکھ کر اپنا دکھ بھول جاتا ہے.

پر ہم یہ گمان نہیں کرسکتے  کہ سامنے والے کی ہنسی دیکھ کر کہ وہ مکمل طور پر خوش ہے

 ہوسکتا ہے وہ اپنے قہقہوں میں اپنے دکھ چھپانے کی کوشش کررہا ہو.
دعا ہےکہ اللہ پاک آپ کی مسکراہٹ اور تندرستی ہمیشہ برقرار رکھے۔

آپ کواور آپ کے اہلِ خانہ کو ناگہانی آفات,دکھ اور پریشانیوں سے ہمیشہ محفوظ رکھے۔

 آپ کو ہمیشہ اپنی رحمتوں کے سائے میں رکھےاوراپنے سواکسی کابھی محتاج نہ کرے۔
آمین

نوٹ : ادارے کا لکھاری کی آراء سے متفق ہونا ضروری نہیں 

مزید :

بلاگ -