محنت کی کمائی کا مذاق نہ اڑائیں۔۔۔

محنت کی کمائی کا مذاق نہ اڑائیں۔۔۔
محنت کی کمائی کا مذاق نہ اڑائیں۔۔۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

تحریر :رخسار ارشد

جب ہم ‏اپنے پیسوں سے گول گپے کھاتے ہیں تب پلیٹ کا پانی بھی پی جاتے ہیں

آئس کریم کھاتے وقت ڈھکن بھی چاٹ لیتے ہیں

مونگ پھلی کھانے کے بعد چھلکے میں دانہ ڈھونڈ رہے ہوتے ہیں 

لیکن کسی کی شادی میں جب کھاتے ہیں تو آدھے سے زیادہ کھانا جھوٹا چھوڑ دیتے ہیں

 ایک باپ اپنی پوری زندگی کی کمائی لگا کر اپنی بیٹی یا بیٹے کی شادی میں آپ کے لئے اچھا کھانا تیار کرواتا ہے

ایک باپ کے محنت کی کمائی کا اس طرح مذاق نہ اڑائیں۔

‏ اتنا ڈالیں جتنا کھا سکیں، اور بچوں کو خود ڈال کر دیں، کم ہو دوبارہ لے لیں، ‏مگر رزق کو ضائع مت کریں۔

‏ اللّٰہ ہم سب کو ہدایت دے۔ آمین

نوٹ : ادارے کا لکھاری کی آراء سے متفق ہونا ضروری نہیں

مزید :

بلاگ -