اُسے اپنی حد سے گزرنے تو دو۔۔۔

اُسے اپنی حد سے گزرنے تو دو۔۔۔
اُسے اپنی حد سے گزرنے تو دو۔۔۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

خُدا کی وہ لعنت کا حقدار ہے 
اُسے اپنی حد سے گزرنے تو دو

تعصب کی دیوار گر جائے گی
جو مسند نشیں ہے اترنے تو دو

پھر سرسبز و شاداب ہو گا چمن
ہوائے اطاعت کو چلنے تو دو

یہ مسجد بھی دے گی دعا آپ کو
نمازی سے مسجد کو بھرنے تو دو

مدد مانگو ہو ساتھ صبر و نماز
گناہوں پہ خود کو بھی ڈرنے تو دو

گناہوں سے ہم اپنے بچ جائینگے
حجاب اُنکے چہرے پہ رہنے تو دو 

امن ہی امن سارے عالم میں ہو
بس پیغام دیں کا بکھرنے تو دو 

انعم صرصر عصیان کو روک کر
شجر رحمتوں کے بھی رہنے تو دو

کلام : محمدانعم (پرتاپ گڑھ، بھارت )

مزید :

شاعری -