بینک فراڈ کیس: ارب پتی پراپرٹی ٹائیکون کو سزائےموت سنادی گئی

بینک فراڈ کیس: ارب پتی پراپرٹی ٹائیکون کو سزائےموت سنادی گئی
بینک فراڈ کیس: ارب پتی پراپرٹی ٹائیکون کو سزائےموت سنادی گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ہنوئی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ویتنام میں ریئل سٹیٹ ٹائیکون کو   عدالت نے ملک کے اب تک کے سب سے بڑے مالیاتی فراڈ کے مقدمے میں موت کی سزا سنا دی.

ویتنام کے سرکاری میڈیا کے مطابق  ٹرونگ مائی لان کو   جنوبی ویتنام کے ہو چی منہ شہر کی ایک عدالت نے ملک کے اب تک کے سب سے بڑے مالیاتی فراڈ کے مقدمے میں موت کی سزا سنائی.ریئل اسٹیٹ کمپنی وین تھین فاٹ  (Van Thinh Phat) کی 67 سالہ چیئر مین پر باضابطہ طور پر 12.5 بلین ڈالر کی دھوکہ دہی کا الزام عائد کیا گیا جو کہ ملک کے 2022 کی جی ڈی پی کا تقریباً 3 فیصد ہے۔
سرکاری میڈیا نے رپورٹ کیا کہ لین نے 2012 اور 2022 کے درمیان سائگن جوائنٹ اسٹاک کمرشل بینک کو غیر قانونی طور پر کنٹرول کیا اور 2,500 قرضوں کی اجازت دی جس کے نتیجے میں بینک کو 27 بلین ڈالر کا نقصان ہوا۔عدالت نےحکم دیاکہ وہ بینک کو 26.9 ملین ڈالر ہرجانہ ادا کریں۔