مذاکراتی عمل میں کشمیری قیادت کی شمولیت لازمی قرار دیا جائے ، عبدالغنی بٹ

مذاکراتی عمل میں کشمیری قیادت کی شمولیت لازمی قرار دیا جائے ، عبدالغنی بٹ

سری نگر (کے پی آئی ) مسلم کانفرنس سربراہ پروفیسر عبدالغنی بٹ نے کہا ہے کہ کسی بھی مذاکراتی عمل میں کشمیری قیادت کی شمولیت ناگزیر ہے ۔ جامع مسجد چرارشریف میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے رمضان المبارک کی برکتوں کو انسانیت کے لئے بالعموم اور مسلمانوں کے لئے بالخصوص اللہ کا ایک ایسا تحفہ قرار دیا جس سے پختگی اور بالغ نظری کی منزلوں تک پہنچا جا سکتا ہے۔ انہوں نے مسئلہ کشمیر ہند پاک دوستی ، جنوبی ایشیائی خطے کے محفوظ مستقبل اور افغانستان میں بحالی امن کی کنجی قرار دیتے ہوئے کہا کہ کشمیری عوام کو ریاست کشمیر کا ملک تسلیم کیا جائے اور یہ کہ کسی بھی مذاکراتی عمل میں کشمیری قیادت کی شمولیت کو لازمی قرار دیا جائے تاکہ اس عمل میں اعتباریت بھی پیدا ہو اور نتیجہ بھی برآمد ہو۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام مذاکراتی عمل کی حمایت کرتے ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ وہ یہ بھی چاہتے ہیں کہ مذاکرات برائے مذاکرات نہ ہوںبلکہ اس عمل کے نتیجے میں کشمیر کے مسئلے کا ایسا حل نکالا جائے جو دیرپا بھی ہو اور آبرومندانہ بھی ہو۔ انہوں نے کہا کہ اب طاقت اور ہٹ دھرمی کے رویوں کو اپنا کر مسائل کا حل نہیں نکالا جاسکتا اسلئے وسعتوں کو پیدا کرتے ہوئے امن و استحکام کے مفاد میں مسائل کا حل تلاش کیا جائے تاکہ دنیا میں امن و استحکام قائم ہو سکے ۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...