نگران سیٹ اپ حکومت اور اپوزیشن کے مشورے سے تشکیل دیا جائیگا، لشکری رئیسانی

نگران سیٹ اپ حکومت اور اپوزیشن کے مشورے سے تشکیل دیا جائیگا، لشکری رئیسانی

کوئٹہ (این این آئی)پیپلز پارٹی کے سابقہ صدر و سینیٹر نوابزادہ میر حاجی لشکری رئیسانی نے کہا ہے کہ 18ویں ترمیم کے بعد حکومت اور اپوزیشن کے صلاح مشورے کے بعد ہی نگران سیٹ اپ تشکیل دیا جائے گا نئے نگران سیٹ اپ کیلئے امیدوار نہیں ہوں اور نہ ہی ابھی تک اس بارے میں سوچا ہے اصل مسئلہ بلوچستان میں آزادانہ انتخابات کرانا ہے ،علاقے دور دراز ہونے کی وجہ سے لوگوں کاپولنگ اسٹیشن پر آنا ایک اہم مسئلہ ہے آج تک الیکشن میں کسی امیدوار نے الیکشن کمیشن کی جانب سے اخراجات کی پابندی نہیں کی ہے اور نہ ہی الیکشن کمیشن سے پوچھا ہے۔ انہوں نے یہ بات ہفتے کے روز نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ 18ویں ترمیم کے بعد ہی حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ایک نگران سیٹ اپ تشکیل دیا جائے گا اور اگر دونوں کے درمیان نگران سیٹ اپ نہ حل ہوا تو الیکشن کمیشن حتمی فیصلہ کرینگے۔

مزید : صفحہ آخر