کابینہ کی بلوچستان کمیٹی کو دھچکا،بی این پی کا ملاقات سے انکار

کابینہ کی بلوچستان کمیٹی کو دھچکا،بی این پی کا ملاقات سے انکار

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سیاسی قوم پرست و مذہبی جماعتوں کے وفود سے ملاقاتیں کی ہیں لیکن جانب بلوچستان نیشنل پارٹی نے کمیٹی سے ملنے سے انکار کردیا۔ بلوچستان کے مسائل کے حل کے لئے حوالے سے قائم وفاقی کابینہ کی خصوصی کمیٹی اپنے سربراہ اور وفاقی وزیر دفاع سید نوید قمر کی سربراہی میں آج کوئٹہ پہنچی، کمیٹی کے دیگر ارکان میں وفاقی وزیراطلاعات قمر زمان کائرہ، وفاقی وزیر قانون ایچ نائیک اور وفاقی وزیر پوسٹل سروسز سردار عمر گورگیج شامل ہیں۔ کمیٹی نے صوبے کے مسائل کے حل کے حوالے سے نقطہ نظر جاننے کیلئے مختلف سیاسی، قوم پرست اور مذہبی جماعتوں کے رہنماﺅں سے ملاقاتیں کیں کمیٹی سے ملنے والوں میں پشتونخواہ ملی عوامی پارٹی ،جمعیت علمائے اسلام ،جماعت اسلامی کے وفود شامل تھے۔ بلوچستان نیشنل پارٹی نے وفاقی کابینہ کی خصوصی کمیٹی سے ملنے سے انکار کردیا ہے۔ پارٹی کے قائم مقام صدر ڈاکٹر جہانزیب جمالدینی نے جیونیوز کو بتایا کہ جب تک بلوچستان کے حالات صحیح نہیں ہونگے ہم کسی مذاکرے کا حصہ نہیں بنیں گے۔ ان کاکہنا تھا کہ پارٹی کو کمیٹی کی جانب سے کوئی باقاعدہ دعوت نامہ نہیں ملا اور نہ ہی انہیں اس کے ایجنڈے کا ہی علم ہے۔ تاہم اس سے قبل کوئٹہ پہنچنے کے بعد کمیٹی کے سربراہ ووفاقی وزیر دفاع سید نوید قمر کا کہنا تھاکہ کمیٹی صوبے کے مسائل کے حل کے حوالے سے متعلقہ صوبائی حکام ،اداروں اور افراد سے بات چیت اور مشاورت کے بعد اپنی سفارشات وفاقی کابینہ کے آئندہ اجلاس میں پیش کریگی۔

مزید : صفحہ اول