این آراوعملدرآمد کیس میں حکومت کی نظر ثانی ایپل سماعت کیلئے منظور

این آراوعملدرآمد کیس میں حکومت کی نظر ثانی ایپل سماعت کیلئے منظور

اسلام آباد ( این این آئی)سپریم کورٹ نے این آراوعملدرآمد کیس میں حکومت کی نظرثانی اپیل سماعت کیلئے منظور کرلی ہے۔ سپریم کورٹ کا پانچ رکنی بنچ جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 15اگست کو سماعت کریگا بنچ میں جسٹس سرمدجلال، جسٹس اعجازافضل،جسٹس گلزاراحمد ،جسٹس اطہرسعید شامل ہیں ۔وفاقی حکومت نے8اگست کو این آر او عملدرآمد کیس میں نظرثانی کی درخواست سپریم کورٹ میں دائر کی تھی جس میں سوئس حکام کو خط لکھنے کے عدالتی حکم کو آئین و قانون کے خلاف تعبیر کرتے ہوئے کہاگیاکہ آئین کے تحفظ کا حلف اٹھانے والا وزیراعظم ایسے عدالتی حکم کا پابند نہیں ہے سپریم کورٹ کے بارہ جولائی 2012 کے حکم پر نظرثانی کی درخواست حکومت پاکستان کی طرف سے اٹارنی جنرل عرفان قادر کے ذریعے دائر کی گئی تھی جس میں کہاگیا کہ 7 رکنی بنچ میں جس طرح سابق وزیراعظم کو 3 بار بلایا گیاوہ آئین و قانون کی بے توقیری ہے، این آر او کیس میں عدالتی حکم ناقابل عمل ہے، اس کیس میں ان 8 ہزار لوگوں کو سنا نہیں گیا جن کے مقدمات بحال ہوئے، این آر او کالعدم قرار دینا روئے زمین پر عدالتی تاریخ کا انوکھا فیصلہ ہے، سوئس حکام کو خط لکھنے کا حکم، قابل عمل نہیں ہے، بارہ جولائی اور 27 جون کے عدالتی احکامات ، غیرقانونی اور غیر مجاز ہیں، یہ آئین کے آرٹیکل 248 ایک کی خلاف ورزی بھی ہے، خط لکھ دیاگیا تو یہ آئین کے آرٹیکل 248 ٹو کی خلاف ورزی ہوگا۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...