سزائے موت عمر قید میں بدلنے کی اپیل ، صدر ر زرداری نے صوبوں سے رائے طلب کر لی

سزائے موت عمر قید میں بدلنے کی اپیل ، صدر ر زرداری نے صوبوں سے رائے طلب کر لی

سلام آباد(آئی این پی) صدر مملکت آصف علی زرداری نے سزائے موت کے تمام قیدیوں کی سزائیں عمر قید میں بدلنے کی اپیل پر پانچوں صوبائی حکومتوں بشمول آزاد کشمےر حکومت سے 13اگست تک رائے طلب کرلی ہے۔ صدر زرداری سے یہ اپیل انصار برنی ٹرسٹ کے سربراہ انصاربرنی نے کی تھی۔ حقوق انصار برنی ایڈووکیٹ کی درخواست پانچوں صوبائی حکومتوں بشمول محمد ایوب قاضی وزیر اعظم سےکرٹریٹ ، وفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک، وفاقی وزیر قانون فاروق نائیک، وزیر دفاع نوید قمر اور آزاد کشمیر کے چیف سےکرٹری محمد شہزاد ارباب کو بھےجتے ہوئے 13 اگست تک رائے سےکرٹری قانون و انصاف کو بھےجنے کی ہدایت کی ہے۔انصار برنی ایڈووکیٹ نے صدر مملکت کے نام ایک اپیل بھیجی تھی جس میں ان کی توجہ سزائے موت کے قیدیوں کی جانب مبذول کروائی ہے۔ سابق وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق انصار برنی نے صدر کے نام اپیل میں کہا کہ پاکستان کی جیلوں میں ساڑھے سات ہزار سے زائد سزائے موت کے قیدیوں میں سے 60سے65 فیصدقیدی بے گناہ ہیں جنہیں عدالتوں سے یا تو انصاف نہیں مل سکا یا مخالفین کی خریدی ہوئی جھوٹی گواہیوں نے انہیں سزائے موت کے پھندے تک پہنچا دیا۔ حضرت عمرؓ کے دور میں قحط پڑا تو انہوں نے حد کی سزا روک دی اسی طرح اگر آج دس سے پندرہ ہزار روپے میں قرآن ہاتھ میں اٹھا کر جھوٹی گواہی یاں دینے والے سرعام بکتے ہوئے ملتے ہوں تو اللہ کے انصاف کو قائم رکھنے کے لئے سزائے موت کے قیدیوں کی سزا کو فی الفور عمر قید میں بدل دیا جانا چاہئے۔انصار برنی نے کہا کہ بعض قیدیوں کی عمریں اسی سے سو سال کے درمیان ہیں ، بعض ذہنی مریض اور پاگل ہوچکے ہیں، معذور ہوچکے ہیں اور کچھ ایسے قیدی بھی ہیں جن کی اپیلیں عدالتوں یا رحم کی اپیلیں ایوان صدر میں پچھلے دس سال سے تیس سالوں سے پڑی ہوئی ہیں۔ انصار برنی نے صدر مملکت سے کہا تھا کہ اگردس قاتل بچ جائیں تو شائد خدا ہمیں معاف کردے گا لیکن اگر ایک بے گناہ پھانسی پر چڑھ گیا تو حکومت، عدالتیں اور قوم خدا کے غضب سے نہیں بچ سکے گی۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...