اقلیتی برادری سے بھی صدر، وزیر اعظم، آرمی چیف، چیف جسٹس لیا جائے: فاروق ستار

اقلیتی برادری سے بھی صدر، وزیر اعظم، آرمی چیف، چیف جسٹس لیا جائے: فاروق ستار

لاہور /فیروز والہ (این این آئی) متحدہ قومی موومنٹ کے ڈپٹی کنوینر، وفاقی وزیر برائے سمندر پار پاکستانی ڈاکٹر فاروق ستار نے مطالبہ کیا ہے کہ صدر، وزیر اعظم، آرمی چیف اور چیف جسٹس اقلیتی برادری سے بھی لیا جانا چاہیے اور اس مقصد کیلئے آئین میں ترمیم کی جائے ۔ قیام پاکستان سے تین دن قبل قائد اعظم محمد علی جناحؒ نے جو خطاب کیا تھا اسے آئین کا حصہ بنایا جائے ، 1947 ءمیں ملک بنانا چیلنج تھا لیکن آج ملک بچانا چیلنج ہے، ایم کیو ایم کی گول میز کانفرنس کا ایجنڈا صرف ملک کی بقاءاور سلامتی ہے جس کے لئے تمام جماعتوں سے رابطے جاری ہیں، حکومت میں رہتے ہوئے اصل اپوزیشن کا کردار ادا کررہے ہیں اوربہت سے عوامی معاملات پر حکومت پر دباﺅ بڑھا کر انہیں فیصلے واپس لینے پر مجبور کیا۔ فاروق ستار نے کہا کہ 11 اگست کو غیر مسلم بھائیوں کے دن کے طورپر منایا جاتا ہے کیونکہ 11 اگست 1947ءکو قائداعظم نے پنجاب اسمبلی میں اپنی تقریر کے دوران غیر مسلموں کے حقوق کو واضح کردیا اور ان کو مکمل مذہبی اور معاشرتی و سیاسی آزادی کی یقین دہانی بھی کروائی تھی۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ اس خطاب کو آئین کا حصہ بنایا جائے ۔

مزید : صفحہ آخر