ملکی ترقی کاانحصار ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل پروسیسنگ انڈسٹری پر ہے

ملکی ترقی کاانحصار ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل پروسیسنگ انڈسٹری پر ہے

فیصل آباد(بیورورپورٹ)ملکی ترقی کا انحصار ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل پروسیسنگ انڈسٹری کا پہیہ رواں دواں رہنے اور اس اہم انڈسٹری کی ترقی پر مبنی ہے۔ جی ایس پی پلس سے پاکستان تب ہی فائدہ اُٹھا سکے گا اگر حکومت سنجیدگی کے ساتھ ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹری کی ٹھوس اور جامع پالیسی بناتے ہوئے ٹیکسٹائل انڈسٹری کو مراعات دے۔ ان باتوں کا اظہار شیخ خالد حبیب چئیرمین آل پاکستان ٹیکسٹائل پروسیسنگ ملز ایسوسی ایشن فیصل آباد ریجن نے جملہ ٹیکسٹائل ایسوسی ایشنز پر مشتمل ٹیکسٹائل فورم کے ایک اہم اجلاس میں کیا۔اجلاس کی میزبانی کے فرائض شیخ خالد حبیب چئیرمین اے پی ٹی پی ایم اے فیصل آباد ریجن نے سر انجام دیئے جبکہ دیگر شرکاءمیں خواجہ محمد امجد چئیرمین پاکستان ہوزری مینو فیکچررز ایسوسی ایشن ، شیخ عبدالقیوم چئیرمین شٹل لیس پاور لومز ایسوسی ایشن، وحید خالق رامے چئیرمین پاور لومز ایسوسی ایشن ، حاجی محمد طالب وائس چئیرمین آل پاکستان سائزنگ ایسوسی ایشن کے علاوہ پاکستان ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن PTEA کے وائس چئیرمین نے شرکت فرمائی۔ اجلا س میں قائدین ایسوسی ایشنز نے ٹیکسٹائل کی زبوں حالی کا رونا روتے ہوئے کہا کہ ٹیکسٹائل کی ایکسپورٹ جو کہ پاکستان کی کل ایکسپورٹ کا کبھی 65فیصد تھی اور سالانہ 25بلین ڈالر کی ایکسپورٹ سے کثیر زرِ مبادلہ حاصل ہونے سے ملکی معیشت کو استحکام حاصل تھا مگر گزشتہ 15سالوں سے ہر ادوار میں آنے والی حکومت کی عدم دلچسپی اور غیر سنجیدہ پالیسی کی بدولت آج پاکستان کی ٹیکسٹائل صنعت اپنا وجود قائم رکھنے سے قاصر ہے۔ آج ٹیکسٹائل کی ایکسپورٹ ملکی کل ایکسپورٹ کا 40فیصد رہ گئی ہے جبکہ ٹیکسٹائل ایکسپورٹ صرف 13بلین ڈالر سالانہ رہ گئی ہے۔

 جبکہ دیگر ہمسایہ ممالک نے ٹیکسٹائل صنعت کو خاطر خواہ مراعات دے کر عالمی منڈی پر قابض ہوتے چلے جا رہے ہیں۔ ٹیکسٹائل فورم کے اس اہم اجلاس میں جملہ ٹیکسٹائل ایسوسی ایشنز کے قائدین نے پاکستان کی ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹریز کی بقاءاور اس کی ترقی کے لئے حکومتی ایوانِ بالا سے درج ذیل اپیل کی ہے کچ گیس انفراسٹرکچر سیس (GIDC) ایک غیر قانونی اضافی بوجھ ہے اسے فوری ختم کیا جائے۔شدید گرمی کے موسم میں گیس کی شدید کمی کیوں ہے؟ ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹریز کو گیس فی الحال کم از کم پچاس فیصد اور مکمل پریشر کے ساتھ مہیا کی جائے۔پریشر کے بغیر گیس سپلائی نہ ہونے کے برابر ہے۔غیر قانونی اور نا انصافی پر مشتمل گیس کلوروفک ویلیو (GCV)پر عدالتی فیصلہ انڈسٹریل صارفین کے حق میں ہونے کے باوجودSNGPL اصل رقم وصول کرنے کے لئےGCV پر لیٹ پیمنٹ سرچارج (LPS) یکسر ختم کرے اور اصل زر مساوی(10) اقساط میں وصول کیا جائے۔

مزید : کامرس