حکومت کے مقامی قرضے اورواجبات 110 کھرب روپے کی سطح پرپہنچ گئے

حکومت کے مقامی قرضے اورواجبات 110 کھرب روپے کی سطح پرپہنچ گئے

کراچی (اکنامک رپورٹر) وفاقی حکومت کے مقامی قرضے اور واجبات 110کھرب روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئے، موجودہ حکومت کا انحصار بھی بینکوں کے قرضوں پر ہی ہے۔اسٹیٹ بینک کے مطابق حکومت نے مالی خسارہ پورا کرنے کیلئے گزشتہ مالی سال بینکاری نظام سے کھربوں روپے قرضہ لیا۔ وفاقی حکومت کے مقامی قرضے اور واجبات بشمول مستقل قرضے، فلوٹنگ ڈیٹ، ان فنڈڈ ڈیٹ اور فارن کرنسی لون میں گزشتہ مالی سال 14 فیصد اضافہ ہوا۔ جس سے ظاہرہوتا ہے کہ حکومت کا بڑی حد تک انحصارمقامی بینکاری نظام پر ہی ہے۔ سست رفتار ریونیو گروتھ کے باوجود سیکیورٹی اورانرجی سبسڈی پر بھاری رقم خرچ کی گئی۔

 حکومت کو یوروبانڈ، کولیشن سپورٹ فنڈ، آئی ایم ایف لون، مسلم ممالک سے امداد اورنجکاری کی آمدن سے اربوں حاصل ہوئے۔ اس کے باوجود مقامی قرضے اور واجبات ایک سودس کھرب روپے کی ریکارڈ سطح تک جاپہنچے ہیں۔

مزید : کامرس