پاکستان جاپان کے ساتھ تجارتی و اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے پر توجہ دے: محمد علی مرزا

پاکستان جاپان کے ساتھ تجارتی و اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے پر توجہ دے: محمد ...

اسلام آباد (کامرس ڈیسک) جاپان دنیا کی تیسری بڑی معیشت ہے اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں بہت ایڈوانس ہے لہذا پاکستان جاپان کے ساتھ تجارتی و اقتصادی تعلقات کومزید فروغ دینے پر توجہ دے جس سے ملک کیلئے فائدہ مند نتائج برآمد ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہار اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے قائم مقام صدر محمد علی مرزا نے اپنے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین باہمی تجارت کی وسیع صلاحیت کے باوجود دوطرفہ تجارت تقریبا 2ارب ڈالر کے لگ بھگ ہے جو بہت کم ہے جبکہ انڈیا اور جاپان کی باہمی تجارت 18ارب ڈالر تک ہے۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے کچھ عرصے سے جاپان کے ساتھ پاکستانی کی تجارت میں کمی دیکھنے میں آئی ہے جو ملک کیلئے بہتر نہیں ہے لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ پاکستان کی حکومت جاپان کے ساتھ تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مستحکم کرنے کیلئے نجی شعبے کے ساتھ ہر طرح کا تعاون کرے تا کہ معیشت کے بہتر کیا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ جاپان کے ساتھ تجارت بڑھانا اور بڑے منصوبوں میں جاپان کا تعاون حاصل کرنا حکومت پاکستان کی اولین ترجیحات میں شامل ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ تجارت کے علاوہ ٹیکنالوجی، سرمایہ کاری، انفراسٹریکچر کی ترقی، توانائی اور صحت و تعلیم ایسے شعبے ہیں جن میں پاکستان جاپان کے ساتھ تعاون بڑھا کر بہتر نتائج حاصل کر سکتا ہے۔محمد علی مرزا نے کہا کہ جاپان صنعتی شعبے میں چین اور جنوبی کوریا سے بھی آگے ہے لہذا جاپان کے ساتھ صنعتی شعبے میں تعلقات کو وسعت دے کر پاکستان بہتر صنعتی ترقی حاصل کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جاپان کے ساتھ اقتصادی تعلقات کو بہتر کرنے کیلئے حکومت نے پچھلے سال جاپان کو پاکستان میں ایک اسپیشل اکنامک زون اور کراچی شہر میں ٹیکسٹائل سٹی قائم کرنے کی اجازت دی ہے جو بہت مثبت اقدام ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان مزید بہتر ترغیبات کے ذریعے جاپان کی کمپنیوں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کی حوصلہ افزائی کرے جس سے ملک میں روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے اور اعلیٰ معیار کی مصنوعات تیار ہونے سے پاکستانی برآمدات کو مزید فروغ ملے گا۔

مزید : کامرس