باہمی تجارت میں اضافے کے لیے آزاد ویزا فراہم کیا جائے :انڈیا پاکستان مشترکہ بزنس فورم

باہمی تجارت میں اضافے کے لیے آزاد ویزا فراہم کیا جائے :انڈیا پاکستان مشترکہ ...

                                         کراچی (اکنامک رپورٹر)انڈیا پاکستان مشترکہ بزنس فورم نے مطالبہ کیاہے کہ پاک بھارت تجارت میں اضافے کے لئے ویزا کے حصول میں سہولت مہیا کی جائے اورسفری پابندیوں سے ہٹ کر آزاد ویزا فراہم کیا جائے۔ انڈیا پاکستان مشترکہ بزنس فورم کو چوتھا اجلاس نئی دہلی میں منعقد ہوا۔ فورم کے اختتام صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انڈیاپاکستان مشترکہ بزنس فورم کے شریک پاکستانی چیئرمین یاور علی شاہ نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان سب سے بڑی نان ٹیرف رکاوٹ ویزا کا معاملہ ہے، کاروباری افراد ملیں گے نہیں تو کاروبار کیسے کریں گے، ویزا ریجیم ایک اہم شعبہ ہے اور اسے کھولنے کی ضرورت ہے۔ مشترکہ بزنس فورم کے بھارتی چیئرمین سنیل کانت منجل نے کہا کہ تاجروں کو ایک سال کا ملٹی پل ویزا فراہم کیا جائے، جس کے تحت تاجروں کو دونوں ملکوں کے تمام شہروں میں آمدورفت کی اجازت دی جائے اور پولیس رپورٹنگ کا نظام ختم کیا جائے، ان کا کہنا تھا کہ ویزا میں اینٹری اور ایگزٹ پوائنٹس کی پابندیاں بھی ختم کی جائیں۔ فورم اجلاس کے دوران بلاامتیاز مارکیٹ رسائی، بزنس ویزا رجیم میں نرمی اور نان ٹیرف بیریئرز کے خاتمے پر غور کیا گیا۔پاکستان اور بھارت کے تاجروں نے باہمی تجارت میں اضافے کے لئے ویزا کے آسان حصول پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ آزاد ویزا نہ صرف دونوں ملکوں کے تاجروں اور صنعت کاروں کو قریب لانے کا ذریعہ بنے گا، بلکہ تجارتی معاہدوں اور نمائشوں میں بھی اضافہ ہوگا۔

مزید : کامرس