سینئرز نے ہمیشہ میری حوصلہ افزائی کی،ردا عاصم

سینئرز نے ہمیشہ میری حوصلہ افزائی کی،ردا عاصم
سینئرز نے ہمیشہ میری حوصلہ افزائی کی،ردا عاصم

  

لاہور(فلم رپورٹر)ٹی وی ڈراموں کی معروف چائلڈ سٹار ردا عاصم نے ایک ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے 7-6سال کی عمر سے سکول کے پروگرامز میں حصہ لینے سے اداکاری کا آغاز کیا اور کیمرے کے سامنے پہلی مرتبہ ایک ٹیلی فلم ©"دُعا" میں مرکزی کردار سے کیا جس میں ایک ایسی یتیم بچی کا کردار ادا کیا جس کو باپ کی کمی احساس کمتری کا شکار کر دیتی ہے۔ بچوں کے سٹیج ڈرامہ عینک والا جن میں پری کے کردار میں تقریباً ساڑھے 4سال تک لوگوں کو متوجہ رکھا۔ٹی وی پر اداکاری کا آغاز کرائم سیریز سے کیا اور مختلف ٹی وی چینلز کے متعدد ڈراموں میں چائلڈ آرٹسٹ کے طور پر کام کیا۔پی ٹی وی پرانہوں نے"روشن راستے"اور "منزل منزل" میں کام کرچکی ہیں۔آنے والے پروجیکٹس جس کی ریکارڈنگز ہو چکی ہیں:فیچر فلم" 36 آورز "اورلاراچی انٹرٹینمنٹ کے ڈرامہ سیریل "کس سے کہوں"شامل ہیں۔ ڈرامہ کی ریکارڈنگ کے دوران بارہا ڈائریکٹر صاحب اور باقی افراد کی طرف سے مجھے سراہا کیا اوسینیئر اداکاروں کی طرف سے میری حوصلی افزائی کی گئی۔ یہ کردار بھی یقینا لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کرے گا۔ڈائریکٹر طاہر جبار کی فلم "شکوہ جواب شکوہ"میں میرا کردار مرکزی نوعیت کا ہے کیونکہ یہ فلم ایک ایسی بچی کی کہانی ہے جس کا باپ اُسے ایک امیر خاندان میں بیچ دیتا ہے۔ جہاں اُس کی معصومیت اُس خاندا کا ایک آوارہ لڑکا ختم کردیتا ہے۔

مزید : کلچر